Thursday , July 20 2017
Home / Top Stories / شیوسینا ایم پی نے ائر انڈیا ڈیوٹی مینیجر کی چپل سے پٹائی کردی

شیوسینا ایم پی نے ائر انڈیا ڈیوٹی مینیجر کی چپل سے پٹائی کردی

رویندر گائیکواڈ نے ملازم کا شرٹ بھی پھاڑ دیا ‘دہلی ائرپورٹ پر واقعہ ‘ پولیس میں شکایت درج
نئی دہلی 23 مارچ ( سیاست ڈاٹ کام ) شیوسینا کے رکن پارلیمنٹ رویندر گائیکواڈ نے ائر انڈیا کے ایک 60 سالہ ڈیوٹی مینیجر کو اپنی چپل سے تقریبا 20 مرتبہ پیٹا اور ان کا شرٹ پھاڑ دیا ہے ۔ یہ واقعہ آج دہلی کے اندرا گاندھی انٹرنیشنل ائرپورٹ پر پیش آیا ۔ اس واقعہ کے بعد ائرلائین نے پولیس میں شکایت درج کروائی ہے ۔ ائر انڈیا کے ترجمان کے بموجب اس کے ڈیوٹی مینیجر دہلی ائرپورٹ پر گائیکواڈ نے کئی مرتبہ چپل سے حملہ کیا جبکہ انہوں نے شکایت کی تھی کہ انہیں بزنس کلاس ٹکٹ رکھنے کے باوجود اکانومی کلاس کی پرواز میں اکانومی کلاس میں پرواز کرنی پڑ رہی ہے ۔ خود رکن پارلیمنٹ نے اس حملہ کی تویق کی ہے اور انہوں نے اس واقعہ پر ہٹ دھرمی والا رویہ اختیار کرتے ہوئے ائرلائینس کے صدر نشین اور مینیجنگ ڈائرکٹر سے معذرت خواہی کا مطالبہ کیا ہے ۔ ائر لائین کے ترجمان نے کہا کہ ائر انڈیا نے شیوسینای رکن پارلیمنٹ کے خلاف اپنے ڈیوٹی مینیجر پر حملہ کیلئے پولیس میں شکایت درج کروائی ہے ۔ پولیس نے کہا کہ ڈیوٹی مینیجر سوکمار کو طبی معائنہ کیلئے روانہ کیا گیا ہے اور اس کی رپورٹ کی بنیاد پر مقدمہ درج کیا جائیگا ۔ ترجمان نے کہا کہ ائر لائین نے گائیکواڈ کے خلاف ایک علیحدہ شکایت بھی درج کروائی ہے اور انہوں نے ائرکرافٹ کا صفائی کیلئے تخلیہ کرنے سے گریز کرتے ہوئے اس کی پرواز میں 40 منٹ کی تاخیر کی ہے ۔ مرکزی وزیر شہری ہوابازی اشوک گجپتی راجو نے آندھرا پردیش میں تلگودیشم کے رکن پارلیمنٹ ہیں اس واقعہ کی مذمت کی ہے اور کہا کہ اس طرح کے حملوں کی حوصلہ افزائی نہیں کی جائیگی ۔ انہوں نے کہا کہ اس طرح کے حملوں کی حوصلہ افزائی نہیں ہوگی اور اس کی ہمیشہ مذمت کی جائیگی ۔ ایسے حملے دوبارہ نہیں ہونے چاہئیں ۔ ائرلائین کے عہدیدار پر حملہ کرنا ناقابل فہم ہے ۔ ائرلائین کے بموجب گائیکواڈ نے ائر انڈیا کے ساتھ بزنس کلاس میں ایک اوپن ٹکٹ خریدا تھا جس کے ذریعہ مسافر کسی بھی تاریخ کو سفر کرسکتا ہے ۔ تاہم گائیکواڈ نے آج صبح پونے سے دہلی کیلئے صبح 7.35 بجے کی پرواز AI 852 میں سفر کیلئے اصرا کیا جو مکمل اکانومی فلائیٹ تھی ۔ فلائیٹ کے دہلی میں لینڈنگ کے بعد انہوں نے اس میں سے اترنے سے انکار کیا اور ائر انڈیا عملہ اور رکن پارلیمنٹ کے مابین بحث ہوگئی ۔ گائیکواڈ نے کہا کہ انہوں نے ڈیوٹی مینیجر سوکمار کو دھیمی آواز میں بات کرنے کو کہا تھا ۔ اس وقت اس نے کہا تھا کہ اس کی ذمہ داری ہے کہ پرواز کو خالی کروایا جائے ۔ میں اس سے اترا نہیں۔ میں وہاں ایک گھنٹے تک بیٹھا رہا اور وہاں صفائی کروانے کی اجازت نہیں دی ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT