Monday , August 21 2017
Home / سیاسیات / شیوسینا دیگر ریاستوں سے بھی مقابلہ کرے گی : اُدھو ٹھاکرے

شیوسینا دیگر ریاستوں سے بھی مقابلہ کرے گی : اُدھو ٹھاکرے

بہار میں پارٹی کا بہتر مظاہرہ ،ہندوتوا نظریہ کے خلاء کو پورا کیا جائیگا
تھانے ۔ 11 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) حکمراں حلیف پارٹی بی جے پی پر درپردہ نکتہ چینی کرتے ہوئے شیوسینا کے صدر ادھو ٹھاکرے نے آج کہا کہ بہار میں ان کی پارٹی کے بہتر مظاہرہ سے انہیں حوصلہ حاصل ہوا ہے اور اب ان کی پارٹی دیگر ریاستوں میں بھی اسمبلی انتخابات کا مقابلہ کرسکتی ہے۔ دیگر ریاستوں میں سیاسی طاقت کا مظاہرہ کرتے ہوئے وہ ہندوتوا نظریہ میں پیدا خلا کو پورا کرے گی۔ کلیان میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ادھو ٹھاکرے نے کہا کہ قبل ازیں پارٹی مہاراشٹرا سے باہر انتخابی مقابلہ سے متعلق سنجیدہ نہیں تھی۔ اب بہار کے نتائج نے اسے حوصلہ بخشا ہے۔ ادھو ٹھاکرے نے مزید کہا کہ ہندوتوا نظریہ میں جو خلا پیدا ہوا ہے، اس کو دور کرتے ہوئے ان کی پارٹی بڑے پیمانے پر پیام عام کرے گی۔ شیوسینا نے جو بی جے پی زیرقیادت این ڈی اے کی حلیف پارٹی ہے، بہار اسمبلی انتخابات میں تنہا مقابلہ کیا تھا۔ اگرچیکہ اس میں اسے ناکامی ہوئی ہے لیکن رائے دہندوں کے مثبت ردعمل نے اسے حوصلہ بخشا ہے۔ ٹھاکرے نے کہا کہ اگرچیکہ میں نے بہار کا دورہ نہیں کیا ، لیکن ہمارے لیڈروں نے جن میں سنجے راوت بھی شامل ہیں ، زبردست انتخابی مہم چلائی تھی۔ ہم نے دو لاکھ سے زائد ووٹ حاصل کئے ہیں۔ اس طرح رائے دہندوں کی حمایت ملنے کے بعد ملک میں ہندوتوا نظریہ کے خلاف کو پُر کرلیا جائے گا۔ پارٹی ورکرس کا بھی یہ مطالبہ ہے کہ ہم کو دیگر ریاستوں میں بھی اسمبلی انتخابات میں حصہ لینا چاہئے۔

TOPPOPULARRECENT