Saturday , August 19 2017
Home / سیاسیات / شیڈول کی تکمیل کیلئے راجیہ سبھا کا اجلاس آج بھی ہوگا

شیڈول کی تکمیل کیلئے راجیہ سبھا کا اجلاس آج بھی ہوگا

نئی دہلی 12 مئی ( سیاست ڈاٹ کام ) راجیہ سبھا کا اجلاس کل بھی منعقد ہوگا تاکہ اپنا اصل شیڈول مکمل کرسکے ۔ راجیہ بسھا کو آج کانگریس کے موجودہ رکن پراوین راشٹراپال کے انتقال کی وجہ سے آج ملتوی کردیا گیا تھا ۔ لوک سبھا کے اجلاس کو دو دن قبل اور راجیہ سبھا کے اجلاس کو ایک دن قبل ملتوی کردینے کا فیصلہ کل کیا گیا تھا ۔ اس طرح لوک سبھا کا اجلاس کل ہی ختم ہوگیا جبکہ اسے دو دن بعد ختم ہونا تھا ۔ منصوبہ کے مطابق راجیہ بھا کو بھی آج غیر معینہ مدت کیلئے ملتوی کیا جانا تھا ۔ پارلیمنٹ کے بجٹ اجلاس کا 23 فبروری کو آغاز ہوا تھا اور 16 مارچ کو اختتام عمل میں آیاتھا ۔ اجلاس کے پہلے اور دوسرے مرحلہ کے دوران پروگرام کے مطابق تعطیلات تھیں۔ تاہم سشن کو درمیان میں روک کر اترکھنڈ ریاست کیلئے علی الحساب رقمی منظوری دی گئی کیونکہ وہاں صدر راج نافذ تھا ۔ ایسے وقت میں جب پارلیمنٹ چل رہی ہو کوئی آرڈیننس جاری نہیں کیا جاسکتا ۔ اس دوران بجٹ سشن کے دوسرے مرحلہ کا 25 اپریل کو آغاز کیا گیا ۔ یہ سشن شیڈول کے مطابق 13 مئی کو ختم ہونا طئے تھا ۔ تاہم کیرالا اور ٹاملناڈو میں اسمبلی انتخابات کے آخری مرحلہ کیلئے انتخابی مہم کی وجہ سے اس میں دو دن کی تخفیف کی گئی تھی ۔ یہ بھی بات ذہن نشین رکھی گئی کہ حکومت نے اپنے منصوبہ کے مطابق اس سشن میں تقریبا تمام قانونی امور کی تکمیل کرلی ہے ۔ اس سشن میں جملہ 10 بلز کو منظوری دی گئی جن میں حکومت کیلئے اہمیت کے حامل کئی بلز ہیں۔ لوک سبھا کے تین ہفتوں تک چلے سشن میں کوئی رکاوٹ یا التوا بھی نہیں ہوا جیسا راجیہ سبھا میںہوا تھا ۔ مختلف امور پر راجیہ سبھا کی کارروائی کئی مرتبہ متاثر رہی ۔ اسپیکر سمترا مہاجن نے کل سشن سے اختتامی خطاب کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ خوش ہیں کہ ماضی بعید میں یہ پہلا سشن تھا جس کی کارروائی میں کسی رکاوٹ کی وجہ سے ایک منٹ کا بھی خلل پیدا نہیں ہوا اور وہ سمجھتی ہیں کہ اس میں تمام ارکان نے کرسی صدارت سے تعاون کیا تھا ۔ 16 ویں لوک سبھا کا آٹھواں سشن 25 اپریل کو شروع ہوا تھا اور اس کا اجلاس 13 مرتبہ منعقد ہوا جس میں جملہ 92 گھنٹے اور 21 منٹ کام کاج ہوا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT