Tuesday , May 23 2017
Home / مذہبی صفحہ / صالحین کیلئے تسکینِ چشم و جاں

صالحین کیلئے تسکینِ چشم و جاں

عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ رضي اللہ عنه قَالَ : قَالَ رَسُوْلُ ﷲِ     صلي اللہ عليه وآله وسلم : قَالَ ﷲُ عزوجل : أَعْدَدْتُ لِعِبَادِيَ الصَّالِحِيْنَ : مَا لَا عَيْنٌ رَأَتْ، وَلَا أُذُنٌ سَمِعَتْ، وَلَا خَطَرَ عَلَي قَلْبِ بَشَرٍ فَاقْرَؤُوْا إنْ شِئْتُمْ : ( فَلاَ تَعْلَمُ نَفْسٌ مَا أُخْفِيَ لَهُمْ مِّنْ قُرَّةِ أَعْيُنٍ جَزَآءً بِمَا کَانُوْا يَعْمَلُوْنَ) (السجدة،۱۷:۳۲) . مُتَّفَقٌ
عَلَيْهِ.
’’حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا : اللہ عزوجل کا فرمان ہے : میں نے اپنے نیک بندوں کے لئے ایسی نعمتیں تیار کی ہیں جنہیں نہ کسی آنکھ نے دیکھا ہے، نہ کسی کان نے سنا ہے اور نہ کسی فرد بشر کے دل میں ان کا خیال آیا ہے۔ چاہتے ہو تو پڑھو : ’’سو کسی کو معلوم نہیں جو آنکھوں کی ٹھنڈک ان کے لئے پوشیدہ رکھی گئی ہے، یہ ان (اعمالِ صالحہ) کا بدلہ ہو گا جو وہ کرتے رہے تھے‘‘۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT