Friday , July 28 2017
Home / شہر کی خبریں / صدارتی امیدوار میرا کمار کو تاحال 38 ووٹ

صدارتی امیدوار میرا کمار کو تاحال 38 ووٹ

رائے دہی تک ووٹس کی تعداد 90 تک پہونچ جائے گی : سمپت کمار
حیدرآباد ۔ 6 ۔ جولائی : ( سیاست نیوز ) : کانگریس کے رکن اسمبلی سمپت کمار نے کہا کہ صدارتی انتخابات میں ابھی تک اپوزیشن کی امیدوار میراکمار کو 38 ووٹ حاصل ہورہے ہیں ۔ جس میں ٹی آر ایس کے ووٹ زیادہ ہیں ۔ ضمیر کی آواز پر ووٹ دینے کے لیے ٹی آر ایس کے عوامی منتخب نمائندے اپنی دلچسپی دیکھا رہے ہیں ۔ رائے دہی تک تائید بڑھ کر 90 تک پہونچ سکتی ہے ۔ آج یہاں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے سمپت کمار نے کہا کہ علحدہ تلنگانہ ریاست کی تشکیل میں بحیثیت اسپیکر لوک سبھا میرا کمار کا رول ناقابل فراموش ہے ۔ کانگریس نے ایک سیکولر اور مجاہد آزادی کی دختر کو دوسری 17 اپوزیشن جماعتوں کی تائید سے صدارتی امیدوار بنایا ہے ۔ تلنگانہ کے عوام سونیا گاندھی اور میرا کمار کے احسان مند ہیں ۔ میرا کمار کی تائید کرتے ہوئے احسان کا بدلہ چکانے کے بجائے چیف منسٹر تلنگانہ نے میرا کمار کے فون کا جواب نہ دیتے ہوئے ان کی توہین کی ہے ۔ جس سے ٹی آر ایس کے قائدین میں بڑے پیمانے پر ناراضگی پائی جاتی ہے اور دن بہ دن تلنگانہ میں میرا کمار کی تائید میں زبردست اضافہ ہورہا ہے ۔ ٹی آر ایس کے منتخب عوامی نمائندے ضمیر کی آواز پر میرا کمار کو ووٹ دینے کے لیے اپنی رضا مندی کا اظہار کررہے ہیں ۔ جس پر وہ اپوزیشن کی صدارتی امیدوار کی خفیہ تائید کرنے والے ٹی آر ایس کے ارکان اسمبلی سے اظہار تشکر کرتے ہیں ۔ سی پی آئی سے ڈر کر چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر تلنگانہ کی عزت و نفس سے کھلواڑ کرتے ہوئے عوامی جذبات کو ٹھیس پہونچا رہے ہیں ۔ ٹی آر ایس ایک غیر اصول جماعت ہے ۔ این ڈی اے کے صدارتی امیدوار رامناتھ کووند کی تائید سے اس کا اندازہ ہوگیا ہے ۔۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT