Saturday , June 24 2017
Home / ہندوستان / ’’صرف مسلم ہی کیوں ہندواور عیسائی خواتین پر بھی بولئے‘‘

’’صرف مسلم ہی کیوں ہندواور عیسائی خواتین پر بھی بولئے‘‘

آپ خود کو مسئلہ تین طلاق تک محدود نہ رکھیں ، مودی کو سی پی آئی کا مشورہ
نئی دہلی ۔ 17 اپریل ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) سی پی آئی نے ’’مسلم خواتین کیلئے انصاف ‘‘ کے بارے میں وزیراعظم نریندر مودی کے ریمارکس کی مذمت کرتے ہوئے آج ان ( مودی) سے کہا کہ صنفی مساوات کو یقینی بنانے کیلئے وہ ہندو اور عیسائی خواتین کے بھی ایسے ہی مسائل پر مساویانہ فکر کریں۔ مودی نے گزشتہ روز تین طلاق کی شدید مخالفت کرتے ہوئے پرزور انداز میں اصرار کیا تھا کہ مسلم خواتین کا استحصال ختم کیا جانا چاہئے اور ان کے ساتھ انصاف کیا جانا چاہئے ۔ سی پی آئی نے استدلال پیش کیا کہ خواتین کے بارے میں تمام پرسنل لاء جانبدارانہ ہیں اور مودی کو مشورہ دیا تھاکہ وہ خود کو صرف تین طلاق کے مسئلہ تک محدود نہ رکھیں۔ سی پی آئی کے قومی سکریٹری ڈی راجہ نے کہا کہ ’’مودی کو وسیع تناظر میں بات کرنا چاہئے ۔ صرف مسلم بہنیں ہی نہیں ، ہندو بہنیں اور عیسائی بہنیں بھی استحصال کا شکار ہورہی ہیں کیونکہ مختلف مذاہب کے عائیلی قوانین خواتین کے خلاف اور جانبدارانہ ہیں‘‘۔ راجہ نے وزیراعظم مودی پر الزام بھی عائد کیا کہ ایک طرف وہ تین طلاق پر کافی کچھ بول رہے ہیں لیکن خواتین کے تحفظات سے متعلق بل پر بدستور خاموش ہیں۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT