Wednesday , September 20 2017
Home / دنیا / صرف پانچ دن میں یورینیم افزودگی کرسکتے ہیں : ایران

صرف پانچ دن میں یورینیم افزودگی کرسکتے ہیں : ایران

تہران ۔ 22 ۔ اگست : ( سیاست ڈاٹ کام ) : ایران کی اٹامک انرجی آرگنائزیشن نے آج ایک اہم بیان دیتے ہوئے کہا کہ امریکہ اگر نیوکلیر معاہدہ سے دستبردار ہوجاتا ہے تو اس صورت میں ایران صرف پانچ دن کے اندر اعلیٰ سطحی یورینیم افزودگی انجام دے سکتا ہے ۔ علی اکبر صالحی نے ایک انٹرویو کے دوران کہا کہ اگر ہم نے عزم کرلیا تو فورڈو ( نیوکلیر پلانٹ ) میں ہم اندرون پانچ دن یورینیم کی 20 فیصد افزودگی کرسکتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ یہ بات بھی اپنی جگہ مسلمہ ہے کہ ہم ایسا کرنا نہیں چاہتے کیوں کہ ہم نیوکلیر معاہدہ تک بڑی مشکل سے پہنچ پائے ہیں یعنی نیوکلیر معاہدہ کو بڑی ہی کوششوں کے بعد قطعیت دی گئی ہے ۔ عالمی طاقتوں کے ساتھ 2015 میں کئے گئے معاہدہ سے ایران پر عائد تحدیدات میں ایران کے نیوکلیر پروگرام میں کٹوتی کے عوض نرمی کی گئی تھی جس میں یورینیم کی 20 فیصد یا اس سے زائد افزودگی پر بھی امتناع عائد کیا گیا تھا ۔ یہ ایک ایسا مرحلہ ہوگا جس سے ایران نیوکلیر ہتھیار سازی کی سطح تک پہنچ سکتا ہے ۔ یاد رہے کہ امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے اپنی صدارتی مہم کے دوران بارہا یہ بات کہی تھی کہ وہ ایران کے ساتھ کئے گئے معاہدہ کو کالعدم قرار دیں گے اور ایران کی جانب سے جب میزائیل ٹسٹ کیا گیا تھا تو امریکہ نے انتہائی برہمی کے عالم میں ایران پر نئی تحدیدات عائد کردی تھیں جہاں دونوں ممالک نے ایکدوسرے پر معاہدہ کے اصول وضوابط کی خلاف ورزی کرنے کا الزام عائد کیا تھا ۔

TOPPOPULARRECENT