Wednesday , September 27 2017
Home / دنیا / طالبان رضامند نہ ہوئے تو تشدد میں اضافہ ممکن : امریکہ

طالبان رضامند نہ ہوئے تو تشدد میں اضافہ ممکن : امریکہ

واشنگٹن ۔ 8 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) امریکہ نے کہا ہیکہ اگر افغان طالبان کے ساتھ مذاکرات کا عمل جلد از جلد شروع نہ ہوا تو آنے والے موسم بہار اور پھر موسم گرما میں حالات کافی خراب ہو سکتے ہیں جس کیلئے امریکہ اور افغان سکیورٹی فورسز کو خود کو تیار کرنا ہو گا۔ امریکی دفتر خارجہ کے ترجمان جان کربی نے یہ بات پیر کو واشنگٹن میں صحافیوں کو بریفنگ دیتے ہوئی کہی۔ افغان حکومت اور طالبان کے مابین براہ راست مذاکرات آئندہ ماہ متوقع تھے تاہم افغان طالبان نے حال ہی میں کہا ہیکہ جب تک ملک سے غیر ملکی افواج کا انخلا نہیں ہوگا تب تک حکومت سے امن مذاکرات نہیں کئے جائیں گے۔ پاکستانی وزیر اعظم کے مشیر برائے امور خارجہ سرتاج عزیز نے بھی حال ہی میں دورۂ امریکہ کے دوران کہا تھا کہ اس بار اگر بات چیت کامیاب نہ ہوئی تو موسم گرما میں تشدد میں خاصا اضافہ ہو سکتا ہے۔ جان کربی کا کہنا تھا کہ پاکستان اور امریکہ اس معاملے میں ایک ہی رائے رکھتے ہیں۔ ان کا کہنا تھاکو  اگر معاہدے کی کوشش ناکام رہتی ہے اور طالبان بات چیت کیلئے رضامند نہیں ہوتے تو ہمیں اور افغان فوج کو آنے والے مہینوں میں تشدد میں تیزی کیلئے تیار رہنا ہو گا۔

TOPPOPULARRECENT