Saturday , June 24 2017
Home / Top Stories / طالبان کا افغانستان پر دھاوا ‘20ملازمین پولیس ہلاک

طالبان کا افغانستان پر دھاوا ‘20ملازمین پولیس ہلاک

کابل گیسٹ ہاؤز پر حملہ میں ایک جرمن اور ایک افغان عہدیدار ہلاک
قندھار۔ 21مئی ( سیاست ڈاٹ کام) کم از کم 20افغان ملازمین پولیس آج علی الصبح ہلاک کردیئے گئے جب کہ طالبان جنگجوؤں نے کئی صیانتی چوکیوں پر شورش زدہ افغانستان کے جنوبی صوبہ زابل میں حملہ کیا ۔ شورش پسند فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے ۔ موسم بہار کے آغاز کے ساتھ ہی افغانستان میں شورش پسندی میں اضافہ ہوگیا ہے ۔ دریں اثناء کابل سے موصولہ اطلاع کے بموجب بندوق برداروں نے بین الاقوامی گیسٹ ہاؤز کابل پر حملہ کرکے ایک جرمن خاتون اور افغان چوکیدار کو ہلاک کردیا ۔ وزارت داخلہ کے بیان میں کہا گیا ہے کہ فن لینڈ کی ایک خاتون لاپتہ ہے ‘ اندیشہ ہے کہ اسے کل رات دیر گئے دھاوے کے دوران اغوا کرلیا گیا ہے ۔ گیسٹ ہاؤز سویڈن کی ایک  این جی او کے زیر انتظام ہے جس کے ڈائرکٹر اسکاٹ بریسلین نے خبررساں ادارہ سے کہا کہ این جی او ایک ہنگامی اجلاس طلب کررہی ہے ۔ فن لینڈ کی خاتون کل رات 11:30بجے پولیس ضلع سے اغوا کرلی گئی ہے ۔ ایک جرمن خاتون اور ایک افغان چوکیدار ہلاک کردیئے گئے ہیں ۔ فن لینڈ کی وزارت خارجہ کے ترجمان نے فن لینڈ کے شہری کی کابل میںاغوا واردات کی توثیق کی ۔ قندھار کی اطلاع کے بموجب  طالبان کا ہم آہنگ حملہ ناٹو کی تائید یافتہ افغان افواج ایک اور ضرب ہے  اور ایک ماہ قبل طالبان کے ہاتھوں 135فوجیوں کی صوبہ بلخ میں ہلاکت کے واقعہ کے بعد پیش آیا ہے ۔ آج صبح طالبان جنگجوؤں کے گروپ نے جو زبردست طور پر بھاری اور ہلکے اسلحہ مسلح تھا ‘ کئی فوجی چوکیوں پر ضلع شاہجائے صوبہ زابل میں بیک وقت حملہ کیا تھا ۔ ضلع کے عہدیدار نے کہا کہ اس حملہ میں کم از کم دیگر 15 افراد زخمی ہوگئے ہیں ۔ طالبان نے اپنے ویب سائیٹس پر اس حملہ کی ذمہ داری قبول کرلی ہے ۔ یہ جارحانہ حملہ موسم بہار میں جارحانہ حملوں کی آغاز کی نشانی ہے ۔ طالبان نے موسم سرما میں بھی سرکاری فوج کے ساتھ اپنی جنگ جاری رکھی تھی ۔ وزیر دفاع امریکہ جیمس مٹیس نے گذشتہ ماہ ہی افعان فوج کیلئے ایک اور مشکل سال کا انتباہ دیا تھا ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT