Sunday , August 20 2017
Home / Top Stories / طبی خدمات کو بہتر بنانے چیف منسٹر کی ہدایت

طبی خدمات کو بہتر بنانے چیف منسٹر کی ہدایت

حیدرآباد۔/20فبروری، ( سیاست نیوز) چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے کہا کہ حکومت ریاست میں طبی خدمات کو بہتر بنانے کیلئے درکار بجٹ جاری کرے گی۔ چیف منسٹر نے عہدیداروں کو ہدایت دی کہ پرائمری ہیلت سنٹر سے نمس کی سطح تک سرکاری دواخانوں میں درکار سہولتوں کی فراہمی کے سلسلہ میں جامع رپورٹ پیش کریں۔ انہوں نے کہا کہ طبی خدمات کو بہتر بنانے اور عوام کی بہتر صحت کیلئے حکومت کے پاس فنڈز کی کوئی کمی نہیں ہے۔ چیف منسٹر نے محکمہ صحت کے بجٹ برائے 2016-17 کے سلسلہ میں منعقدہ اجلاس میں عہدیداروں کو ریاست میں طبی خدمات بہتر بنانے کے سلسلہ میں ضروری ہدایات جاری کیں۔ وزیر صحت ڈاکٹر لکشما ریڈی، وزیر فینانس ای راجندر، چیف سکریٹری ڈاکٹر راجیو شرما، پرنسپال سکریٹری پلاننگ بی پی آچاریہ، پرنسپال سکریٹری ہیلت راجیش تیواری، سکریٹریز فینانس رام کرشنا راؤ اور شیو شنکر، کمشنر انفارمیشن نوین متل، چیف منسٹر آفس کے پرنسپال سکریٹری نرسنگ راؤ اور دیگر عہدیدار اس اجلاس میں شریک تھے۔ چیف منسٹر نے کہا کہ سرکاری دواخانہ اور ہیلت سنٹرس میں ماحول صحت و صفائی پر مبنی ہونا چاہیئے اور مریضوں کیلئے بستر، ادویات، ہاسپٹل کیلئے برقی، ٹائیلٹ، بیڈ شیٹس جیسی بنیادی سہولتوں کی فراہمی پر توجہ دی جانی چاہیئے۔ انہوں نے کہا کہ بیڈ شیٹس وقتاً فوقتاً تبدیل کی جانی چاہیئے اور حکومت اس کے لئے خصوصی لانڈری سسٹم کے آغاز کا منصوبہ رکھتی ہے۔ انہوں نے عہدیداروں کو مشورہ دیا کہ ہاسپٹلس کی قدیم عمارتوں کی جگہ نئی عمارتیں تعمیر کی جائیں۔ انہوں نے کہا کہ حیدرآباد میں گاندھی اور عثمانیہ ہاسپٹلس کے علاوہ 1000بستروں کا نیا عصری دواخانہ تعمیر کیا جائے گا۔ عہدیداروں کو مشورہ دیا گیا کہ وہ اس نئے ہاسپٹل کیلئے موزوں مقام کی نشاندہی کریں۔ اوپل ایل بی نگر، ملکاجگیری کنٹونمنٹ ، قطب اللہ پور کوکٹ پلی، شیر لنگم پلی راجندر نگر میں ایک ، ایک نیا سرکاری ہاسپٹل تعمیر کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ کنگ کوٹھی میں واقع سرکاری ہاسپٹل میں مزید سوپر اسپیشالیٹی سہولتوں کا اضافہ کیا جائے گا۔ چیف منسٹر نے 7 سرکاری دواخانوں میں خواتین اور بچوں کے علاج سے متعلق خصوصی شعبہ جات قائم کرنے کی بھی ہدایت دی۔ ورنگل ایم جی ایم ہاسپٹل کی عمارت میں ہیومن اینڈ چائیلڈ سے متعلق سہولتوں کا آغاز کیا جائے گا۔ انہوں نے دیہی علاقوں میں بہتر طبی سہولتوں کی فراہمی پر توجہ دینے کی ہدایت دی۔ چیف منسٹر نے بتایا کہ حکومت نئے ہاسپٹلس کے قیام کے ساتھ ڈاکٹرس اور دیگر طبی عملے کی فراہمی کے اقدامات کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ ہر ضلع میں کم از کم 4مقامات اور ریاست میں جملہ 40مقامات پر ایم آر آئی، سی ٹی اسکیان، الٹرا ساؤنڈ جیسی سہولتیں فراہم کی جانی چاہیئے۔ انہوں نے 108 اور 104ہیلت سرویسیس کو بہتر بنانے کی ہدایت دی۔ واضح رہے کہ گورنر ای ایس ایل نرسمہن نے کل گاندھی ہاسپٹل کا اچانک معائنہ کرتے ہوئے وہاں طبی سہولتوں کی کمی پر ناراضگی کا اظہار کیا تھا۔ گورنر نے وزیر صحت لکشما ریڈی سے ربط قائم کرتے ہوئے اپنی ناراضگی جتائی تھی۔
اس پس منظر میں چیف منسٹر نے آج اعلیٰ سطحی اجلاس طلب کیا۔

TOPPOPULARRECENT