Monday , October 23 2017
Home / Top Stories / طوفان ’’روآنو‘‘ میں شدت، حیدرآباد میں مزید بارش کا امکان

طوفان ’’روآنو‘‘ میں شدت، حیدرآباد میں مزید بارش کا امکان

حیدرآباد۔/20مئی، ( سیاست نیوز) خلیج بنگال میں ہوا کے دباؤ میں کمی کے باعث طوفان ’روآنو‘ میں شدت پیدا ہوگئی ہے اور گذشتہ 6گھنٹوں کے دوران 25کلو میٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے یہ طوفان شمال مشرق کی جانب پیشرفت کررہا ہے۔ 20مئی کی شب تک یہ طوفان آندھرا پردیش کے کالنگا پٹنم تک پہنچ جائے گا اور اڑیسہ کے پرادیپ علاقہ سے ہوتے ہوئے بنگلہ دیش کے چٹگانگ   سے ٹکرا کر گذر جائے گا۔ محکمہ موسمیات کے مطابق طوفان ’روآنو‘ کے ہنوز مستحکم ہونے کا اندیشہ ہے اور اس سے شدید طوفانی بارش بھی ہوسکتی ہے لیکن موجودہ موسمی حالات سے پتہ چلتا ہے کہ طوفان کی شدت میں کمی آئے گی اور یہ طوفان تیزی سے آگے بڑھ جائے گا۔ 22مئی کی صبح تک یہ طوفان توقع ہے کہ بنگلہ دیش سے ٹکراکر گذر جائے گا۔ آندھرا پردیش اور اڑیسہ کے ساحلی علاقوں میں طوفان کی شدت کی وجہ سے تیز ہواؤں کے ساتھ بارش ہورہی ہے۔ اگلے 24گھنٹوں کے دوران اس میں مزید شدت پیدا ہوگی۔ اس طوفان کی شدت کی وجہ سے دونوں شہروں حیدرآباد اور سکندرآباد میں بھی مزید بارش ہوسکتی ہے۔ تلنگانہ کے بعض اضلاع میں بارش کا امکان ہے۔ حیدرآباد اور اطراف و اکناف میں موسم ابرآلود رہے گا اور دوپہر یا شام کے وقت تیز بارش ہوگی۔ آج کا درجہ حرارت زیادہ سے زیادہ 37ڈگری اور کم سے کم 26 ڈگری سیلسیس ریکارڈ کیا گیا۔ اسی دوران جنوب مغربی مانسون میں مزید شدت پیدا ہوگئی ہے اور یہ جنوب مشرقی خلیج بنگال کے حصوں میں سرگرم ہے۔ انڈومان نکوبار جزائر میں مانسون گشت کررہا ہے۔ موسمی حالات سے پتہ چلتا ہے کہ مانسون میں مزید پیشرفت ہوگی۔اسی دوران آندھراپردیش کے ڈپٹی چیف منسٹر چنا راجپا نے کہاکہ طوفان روآنو کے باعث مشرقی گوداوری ضلع میں طوفان کی صورتحال پیدا ہوگئی ہے اور 11.4 لاکھ افراد متاثر ہوئے ہیں۔
9,360 ہیکٹرس پر پھیلی ہوئی فصلیں تباہ ہوگئیں۔ گزشتہ دو دن سے شدید بارش کے باعث 304 مواضعات متاثر ہوگئے۔

TOPPOPULARRECENT