Thursday , September 21 2017
Home / اضلاع کی خبریں / ظہیرآباد میں ترقیاتی کاموں کیلئے 72 کروڑ روپئے منظور

ظہیرآباد میں ترقیاتی کاموں کیلئے 72 کروڑ روپئے منظور

شادی مبارک اسکیم کے چیکس کی تقسیم ، ریاستی وزیر ٹی ہریش راؤ کا خطاب

ظہیرآباد /13 جنوری ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) ریاستی وزیر آبپاشی مسٹر ٹی ہریش راؤ نے کل شام یہاں ایم باگاریڈی اسٹیڈیم میں کلیان لکشمی و شادی مبارک اسکیم کے چیکس کی تقسیم کے ضمن میں منعقدہ پروگرام کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے انکشاف کیا کہ ریاستی حکومت نے حلقہ اسمبلی ظہیرآباد میں مختلف ترقیاتی کاموں کی انجام دہی کیلئے 72 کروڑ روپئے منظور کئے ہیں ۔ جس کے منجملہ 30 کروڑ روپئے مالیتی کاموں کی شروعات کیلئے سنگ بنیاد رکھنے کی رسم بھی ادا کی جاچکی ہے ۔ انہوں نے ترقیاتی کاموں کی تفصیلات کا تذکرہ کیا۔ انہوں نے ایک روزہ اپنے طوفانی دورہ کے موقع پر 2 کروڑ روپئے کی لاگت سے گورنمنٹ گرلز ڈگری کالج اردو میڈیم کی عمارت کا سنگ بنیاد بھی رکھا جب کہ گرلز ہائی اسکول ظہیرآباد میں زائد کلاس روم کی تعمیر کیلئے 55 لاکھ روپئے منظور کئے جانے کا بھی انکشاف کیا ۔ انہوں نے شادی مبارک و کلیان لکشمی اسکیم کے تحت حلقہ اسمبلی ظہیرآباد کے 517 استفادہ کنندگان میں 2.63 کروڑ روپئے کے چیکس تقسیم کئے جانے کا بھی انکشاف کیا اور کہا کہ ضلع سنگاریڈی کے دیگر اسمبلی حلقہ جات کے مقابلے میں حلقہ اسمبلی ظہیرآباد میں سب سے زیادہ چیکس تقسیم کئے گئے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ یہ چیکس پہلے دلہن کے نام پر دئے جارہے تھے لیکن اب دلہن کی ماں کے نام پر دئے جارہے ہیں ۔ انہوں نے عنقریب بنگارو تلی اسکیم روشناس کرنے اور مستقر کوہیر میں لڑکوں کیلئے مائناریٹی اقامتی اسکول قائم کئے جانے کا بھی انکشاف کرتے ہوئے کہا کہ ریاست تلنگانہ میں تاحال 120 اقامتی اسکول قائم کئے گئے ہیں ۔ جس پر 600 کروڑ روپئے سالانہ کے اخراجات عائد ہو رہے ہیں جبکہ ان اسکولوں میں زیر تعلیم طلباء و طالبات کیلئے انگریزی کے ساتھ عربی اور اردو میں بھی تعلیم دینے کا نظم ہے ۔ رکن اسمبلی ظہیرآباد ڈاکٹر جے گیتا ریڈی نے بحیثیت رکن اسمبلی اپنے حلقہ انتخاب میں انجام دئے گئے ترقیاتی کاموں کا تذکرہ کیا اور پیشرو حکومت کے دور میں منظور کئے گئے ڈی ایڈ کالج کے قیام میں تاحال کوئی پیشرفت نہ ہونے کی جانب وزیر موصوف کی توجہ مبذول کرائی ۔ انہوں نے ہوٹل منیجمنٹ کالج کی تعمیر شدہ عمارت کا عنقریب افتتاح عمل میں لائے جانے کا بھی انکشاف کیا ۔ انہوں نے ایس سی و ایس ٹی سب پلان کی طرح اقلیتوں کیلئے بھی سب پلان منظور کرنے کی ضرورت ظاہر کی ۔ رکن پارلیمنٹ ظہیرآباد مسٹر بی بی پاٹل نے اپنے خطاب کے دوران حلقہ اسمبلی ظہیرآباد میں خشک بندرگاہ Dry Port اور نیشنل انڈسٹرئیل انوسمنٹ زون NIIZ کے قیام سے زیادہ روزگار کے مواقع فارہم ہونے کی امید ظاہر کی ۔ ایم ایل سی جناب محمد فریدالدین نے ریاست تلنگانہ میں بلاوقفہ برقی سربراہی کو ریاستی حکومت کا ناقابل فراموش کارنامہ قرار دیا ۔ انہوں نے شادی مبارک اسکیم سے غریب والدین کو اپنی لڑکیوں کی شادی کرانے میں مدد ملنے کا ادعا کیا اور کہا کہ مذہب اسلام میں یتیم لڑکیوں کی شادیاں کرانے پر عمرہ سے زیادہ ثواب ملنے کی بات کہی گئی ہے ۔ بعد ازاں حلقہ اسمبلی ظہیرآباد میں شامل منڈلوں اور بلدیہ ظہیرآباد کے 517 استفادہ کنندگان میں شادی مبارک و کلیان لکشمی اسکیم کے چیکس تقسیم کئے گئے ۔ اس موقع پر سرکردہ قائدین مسرز چنوری لاونیا صدرنشین بلدیہ ، چرنجیوی پرساد صدر ظہیرآباد منڈل پرجا پریشد ، انیتا صدر کوہیر منڈل پرجا پریشد ، کملا بائی صدر نیاکل منڈل پرجا پریشد ، سنیتا پاٹل ، کشن پوار ، اروند ریڈی ، شاردھا بھاسکر ریڈی اراکین ضلع پرجا پریشد ، محمد عظمت پاشاہ نائب صدرنشین بلدیہ کے مانک راؤ انچارج ٹی آر ایس پی رام کرشنا ریڈی صدرنشین آتما کمیٹی ٹی آرایس اور کانگریس کے منڈل صدور ، اراکین منڈل پرجا پریشد اراکین بلدیہ سرپنچوں کے بشمول عوام کی کثیر تعداد موجود تھی ۔ اس موقع پر مختلف سرکاری محکمہ جات کے عہدیداروں مسرز وینکٹیشورلو جوائنٹ کلکٹر سرینواس ریڈی آر ڈی او ، ای انیل کمار تحصیلدار ظہیرآباد بی گیتا تحصیلدار کوہیر منڈل ، جیتو رام نائیک میونسپل کمشنر ، دسرتھ نائب تحصیلدار ظہیرآباد ، محمد شفیع ریونیو انسپکٹر ، روی ڈی ایس پی اور دیگر نے بھی اپنی شرکت درج کروائی ۔

TOPPOPULARRECENT