Wednesday , September 20 2017
Home / اضلاع کی خبریں / عادل آباد میں سمنٹ فیاکٹری کے احیاء کی راہ ہموار

عادل آباد میں سمنٹ فیاکٹری کے احیاء کی راہ ہموار

مرکزی حکومت سے ریاستی وزراء کے ٹی آر اور جوگو رامنا کی کامیاب نمائندگی

عادل آباد /13 جنوری ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) ضلع عادل آباد کے ہر گوشہ میں ریاستی وزیر جوگو رامنا کے خدمات کی ستائش کی جارہی ہے ۔ اس کی اصل وجہ یہ ہے کہ موصوف کی خصوصی دلچسپی کے پیش نظر مستقر عادل آباد میں مہلک بیماری ’’ کینسر ‘‘ علاج کیلئے چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ 100 کروڑ روپئیوں سے کینسر دواخانہ کی تعمیر کی منظوری جہاں ایک طرف دے چکے ہیں وہی دوسری طرف تقریباً 18 سال سے بند پڑی ہوئی سمنٹ فیاکٹری کی کشادگی کیلئے بھی مرکزی حکومت نے اپنی رضامندی کا اظہار کیا ہے ۔ تفصیلات کے مطابق ریاست میں دو کینسر دواخانے قائم کرنے کا منصوبہ چیف منسٹر نے بنایا تھا ۔ جس میں ضلع ورنگل کے علاوہ مستقر عادل آباد کو مسٹر جوگو رامنا کی دلچسپی کے بناء پر منظوری حاصل ہوئی جبکہ مستقر عادل آباد کے Rims دواخانہ کے تحت سوپر اسپشلٹی ہاسپٹل قائم کرنے کیلئے مرکزی حکومت سے 150 کروڑ روپئے فراہم ہوچکے ہیں جس کا کام تیزی سے جاری ہے جو آئندہ سال اپنی خدمات کا آغاز کرے گا ۔ مستقر عادل آباد میں 807 ایکر اراضی پر سمنٹ فیاکٹری کا قیام جناب مسعود احمد خورشید کانگریس کے پہلے رکن اسمبلی نے عمل میں لایا ۔ کمیونسٹ پارٹی سے سیاسی زندگی کا آغاز کرنے والے غریب گھرانے کے مسٹر مسعود احمد خورشید نے عادل آباد میں پائی جانے والی غریبی اور بے روزگاری کے خاتمہ کی غرض سے اجتماعی روزگار فراہم کرنے کو ترجیح دیتے ہوئے سمنٹ فیاکٹری آنجہانی چیف منسٹر مسٹر جے وینگل راؤ کی سرپرستی میں 1975 میں قائم کرتے ہوئے 4000 افراد کو روزگار فراہم کیا تھا ۔ علاوہ ازیں کاٹن تجارت کو ملحوظ رکھتے ہوئے کسانوں کے تعاون سے اسپنگ ملز کا قیام بھی عمل میں لایا تھا جس کو تلگودیشم کے دور میں چیف منسٹر مسٹر کے چندرا بابو نائیڈو نے بند کرادیا ۔ 807 ایکر پر موجودہ سمنٹ فیاکٹری اپنی آغوش میں سمنٹ پیداوار کے 100 سال کا ذخیرہ محفوظ کئے ہوئے ہے ۔ سمنٹ فیاکٹری کے اطراف و اکناف کی دو ہزار ایکر اراضی بھی سمنٹ فیاکٹری کے تحت کرایہ پر حاصل کی گئی تھی ۔ زائد از 23 سال چلنے والی سمنٹ فیاکٹری کو نقصان کی بناء پر 1998 میں بند کردیا گیا جس کے بناء پر سمنٹ فیاکٹری کارآمد مشین ناکارہ ہوکر رہ گئے اور ہزاروں افراد کو روزگار سے محروم ہونا پڑا ۔ اس سمنٹ فیاکٹری کے احیاء کیلئے مسٹر جوگو رامنا قبل ازیں دو مرتبہ دہلی پہونچکر مرکزی حکومت سے نمائندگی کرچکے ہیں ۔ جبکہ دو دن قبل چیف منسٹر کی ہدایت پر مسٹر کے تاراکا راما راؤ اور مسٹر جوگو رامنا ریاستی وزراء کے علاوہ عادل آباد رکن لوک سبھا مسٹر جی ناگیش ،بوتھ رکن اسمبلی مسٹر راتھوڑ بابو راؤ نے دہلی پہونچ کر مرکزی وزیر بھاری مصنوعات مسٹر اننت گیتے سے ملاقات کرتے ہوئے سمنٹ فیاکٹری کے احیاء کیلئے ریاستی حکومت کے ہر طرح کا تعاون کرنے کا تیقن دیا جس پر مرکزی وزیر نے عنقریب حیدرآباد میں ایک اجلاس منعقد کرنے اور جلد از جلد مرکزی حکومت کی جانب سے موثر اقدامات کرنے کا تیقن دیا ۔

TOPPOPULARRECENT