Thursday , August 17 2017
Home / Top Stories / عازمین حج ‘ اللہ کے مہمان ۔ ان کی خدمت تلنگانہ حکومت کی خوش قسمتی: محمو دعلی

عازمین حج ‘ اللہ کے مہمان ۔ ان کی خدمت تلنگانہ حکومت کی خوش قسمتی: محمو دعلی

ع450عازمین پر مشتمل پہلے قافلہ کی روانگی ‘ ڈپٹی چیف منسٹر نے جھنڈی دکھائی۔ صبرو تحمل کا مظاہرہ کرنے مفتی خلیل احمد کی تلقین

حیدرآباد۔13اگست(سیاست نیوز) ریاست تلنگانہ سے عازمین حج کے پہلے قافلے کو نعروں کی گونج میں جھنڈی دیکھاکر نائب وزیراعلی تلنگانہ ریاست الحاج محمد محمودعلی نے حج ہاوز نامپلی سے وداع کیا۔450عازمین حج پر مشتمل دو بسیں حج ہاوز سے راجیو گاندھی انٹرنیشنل ائیر پورٹ کے لئے روانہ ہوئے ۔ عازمین حج کو روانہ کرنے والوں میں شیخ الجامعہ مفتی خلیل احمد ‘ سکریٹری محکمہ اقلیتی بہبود سید عمر جلیل ‘ چیرمن وقف بورڈ الحاج محمد سلیم ‘ رکن قانون ساز کونسل فاروق حسین ‘ ڈ پٹی مئیر بابا فصیح الدین ‘ چیرمن اقلیتی مالیتی کارپوریشن اکبر حسین ‘ رکن تلنگانہ وقف بورڈ وحید احمد ایڈوکیٹ ‘ رکن بلدیہ گن فاونڈری ممتا منگا کے علاوہ دیگر لوگ شامل تھے ۔ قبل ازیں عازمین حج کی کثیرتعداد سے خطاب کرتے ہوئے نائب وزیراعلی الحاج محمد محمودعلی نے کہاکہ حج کی تیاریوں کے آغاز کے ساتھ ہی عازمین کے لئے موثر پینے کی پانی کی قلت کا حکام کوسامنا تھا مگر متعلقہ ٹی آر ایس کارپوریٹر ممتا مانگا فوری طور پر حرکت میںآتے ہوئے اس مسلئے کو جنگی خطوط پر حل کیا۔ انہو ںنے کہاکہ عازمین حج کے انتظامات معمولی کام نہیں ہے ۔ انہوں نے مزیدکہاکہ ریاست تلنگانہ کا محکمہ اقلیتی بہبود اور حج کمیٹی کی شب روز جستجو کے بعد موثر انتظامات انجام دئے جاتے ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ عازمین حج اللہ کے مہمان ہیں اور یہ حکومت تلنگانہ کی خوش قسمتی ہے کہ ہم ہر سال بہتر سے بہتر انتظامات کی انجام دہی کے ذریعہ عازمین کو مقدس فریضہ حج کے لئے روانہ کرتے ہیں۔ انہو ںنے بتایا کہ نہ صرف ریاست تلنگانہ بلکہ مکہ مکرمہ اور مدینہ شریف میں بھی بہتر سہولتوں کی فراہمی حکومت تلنگانہ کی اولین ترجیحات میں شامل ہے ۔ جناب محمد محمودعلی نے کہاکہ بیس ہزارسے زائد عازمین کی درخواستیں ہمارے پاس آتی ہیں جس میں قرعہ اندازی کے ذریعہ عازمین کا انتخاب عمل میں لایا جاتا ہے او روہی لوگ کا نام قرعہ اندازی میں آتا ہے جن کو اللہ تعالی نے حج کے لئے منتخب کیا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ بنا کی اللہ کے انتخاب کے خانگی ٹورس اینڈ ٹروایلس سے بھی حج یا عمرہ کے لئے روانگی ممکن نہیں ہے ۔ جناب محمد محمودعلی نے کہا کہ 2700عازمین حج اس سال ریاست تلنگانہ سے روانہ ہونگے اور ہمیںامید ہے کہ آنے والے سال مرکزی حکومت ریاست تلنگانہ کی ضرورتوں کے پیش نظر ہمارے کوٹہ میںاضافہ کریگی ۔ جناب محمد محمودعلی نے کہاکہ اس سال ہمارے پاس عازمین حج کے پہلے قافلے کی روانگی کے وقت سنٹر ل حج کمیٹی کے رکن بھی موجود ہیں اور ہمیں امید ہے کہ وہ یہاں کے حالات او رانتظامات کے پیش نظر ریاست تلنگانہ کے حج کوٹہ میںاضافہ کی تجویز سنٹرل حج کمیٹی کو پیش کریں گے۔ جناب محمد محموعلی نے کہاکہ عازمین حج کے ساتھ وہ لوگ بھی قابل احترام ہیںجو عازمین کی خدمت کے لئے مقرر کئے گئے ہیں۔ انہوں نے خادم الحجاج اور حج ہاوز نامپلی میںخدمات انجام دینے والے والینٹرس دونوں کی ستائش کی اورکہاکہ اللہ تعالی کے پاس مذکورہ افراد کے خدمات کو بھی شرف قبولیت ملے گی۔انہوں نے عازمین حج سے ریاست کی ترقی ‘ خوشحالی او رگنگا جمنی تہذیب کے فروغ کے لئے دعائوں کی بھی عازمین حج سے گذار ش کی ۔شیخ الجامعہ مفتی خلیل احمد نے حج کے مسائل پر بصیرت افروز خطاب کرتے ہوئے کہاکہ صبر وتحمل کا مظاہر ہ عازمین حج کے لئے نہایت ضروری ہے ۔ انہوں نے فرائض اور فضلیت حج کے متعلق بھی تفصیلی بات کی اورریاست تلنگانہ کے عازمین حج کو دوران حج پیش آنے والی مشکلات کو نظر اندازکرتے ہوئے امور حج کی نرمی کے ساتھ انجام دہی پر توجہہ مرکوز کرنے کی تلقین کی ۔ مفتی خلیل احمد نے احرام کی افادیت پر بھی روشنی ڈالی اور کہاکہ میدان حج میںامیر اور غریب کے فرق کو ختم کرنے کے لئے احرام باندھنے کا حکم دیاگیا ہے ۔ مفتی خلیل احمد نے کہاکہ کعبتہ اللہ شریف کا مسلسل دیدار بھی ثواب ہے مگر کعبہ کے چکر کاٹتے وقت دیکھنے سے منع کیاگیا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ کعبہ پر پہلی نظر پڑھنے کے ساتھ جو دعاء مانگیں گیں وہ قبول ہوگی ‘ لہذا ہم کو چاہئے کہ ہم عزت کی زندگی اور ایمان والی موت کے دعائیں مانگے جس میں دنیا کی سب خوشیاں شامل ہیں۔چیرمن وقف بورڈالحاج محمد سلیم نے عازمین حج سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ ریاست تلنگانہ میںجب سے ٹی آر ایس حکومت برسراقتدار ائی ہے تب سے عازمین حج کے لئے اتنا وسیع انتظامات کئے جارہے ہیں۔ انہوں نے مزیدکہاکہ یہ حکومت تلنگانہ کی ٹیم ورک کا نتیجہ ہے-

 

TOPPOPULARRECENT