Thursday , August 24 2017
Home / شہر کی خبریں / عازمین حج کو تعطیل کے باوجود ٹیکہ اندازی کیمپ کی سہولت

عازمین حج کو تعطیل کے باوجود ٹیکہ اندازی کیمپ کی سہولت

فلائٹس کے شیڈول میں تبدیلی کے لیے سنٹرل حج کمیٹی سے نمائندگی
حیدرآباد۔/28جولائی، ( سیاست نیوز) تلنگانہ حکومت کی جانب سے تعطیل کے اعلان کے باوجود تلنگانہ حج کمیٹی نے آج عازمین حج کی خدمت جاری رکھتے ہوئے ٹیکہ اندازی کیمپ منعقد کیا۔ سابق صدر جمہوریہ ڈاکٹر اے پی جے عبدالکلام کے انتقال پر تلنگانہ حکومت نے تمام سرکاری دفاتر اور اسکولس کو تعطیل کا اعلان کیا تھا لیکن تلنگانہ حج کمیٹی نے معلنہ پروگرام کے مطابق ٹیکہ اندازی کیمپ جاری رکھا اور حج کمیٹی کے اسٹاف نے ڈاکٹرس کی موجودگی میں تقریباً 500 عازمین حج کی ٹیکہ اندازی انجام دی۔ اسپیشل آفیسر حج کمیٹی پروفیسر ایس اے شکور نے شخصی طور پر ٹیکہ اندازی کیمپ کے انتظامات کی نگرانی کی۔ حج کمیٹی نے پیر، منگل اور چہارشنبہ کو شہر کے عازمین حج کیلئے حیدرآباد میں ٹیکہ اندازی کیمپ کا اعلان کیا تھا تاہم آج تعطیل کے باوجود عازمین حج کو دشواری سے بچانے کیلئے کمیٹی نے کام جاری رکھا اور کیمپ کو برقرار رکھا گیا۔ اسی طرح ڈائرکٹر اقلیتی بہبود جلال الدین اکبر بھی آج وقف بورڈ کے دفتر میں دن بھر موجود رہے اور متعلقہ فائیلوں کی یکسوئی کی۔ انہوں نے مختلف عوامی نمائندگیوں کی سماعت  کی۔ اسی دوران پروفیسر ایس اے شکور نے بتایا کہ شہر کے عازمین حج کیلئے بروز چہارشنبہ حج کیمپ میں ٹیکہ اندازی کیمپ کا آخری دن رہے گا۔ انہوں نے بتایا کہ اضلاع میں بھی ٹیکہ اندازی کیمپ منعقد کئے جائیں گے جہاں متعلقہ ضلع سے تعلق رکھنے والے عازمین استفادہ کرپائیں گے۔ اسی دوران پروفیسر ایس اے شکور نے سنٹرل حج کمیٹی کو مکتوب روانہ کرتے ہوئے عازمین کی روانگی سے متعلق شیڈول میں تبدیلی کی خواہش کی ہے۔ ایر انڈیا نے تلنگانہ اور آندھرا پردیش کے عازمین کیلئے جو فلائیٹ شیڈول جاری کیا ہے اس کے تحت 7دن میں 16فلائیٹس حیدرآباد سے جدہ کیلئے روانہ ہوں گی۔ روزانہ 3فلائیٹس کے سبب حج کمیٹی کو عازمین حج کی خدمت میں دشواریوں کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ پروفیسر ایس اے شکور نے سنٹرل حج کمیٹی کو مکتوب روانہ کرتے ہوئے شیڈول میں تبدیلی کی خواہش کی اور تجویز پیش کی کہ روزانہ صرف 2 فلائیٹس رکھی جائیں اور اس میں بھی 6تا8گھنٹے کا وقفہ رہے تاکہ حج کمیٹی عازمین حج کی بہتر طور پر رہنمائی اور خدمت کرسکے۔ ایک دن میں تین فلائیٹس کے شیڈول کے مطابق حج ہاوز میں بیک وقت 2500 عازمین موجود رہیں گے کیونکہ عازمین کو 48گھنٹے پہلے حج ہاوز میں رپورٹنگ کرنی ہے اور اضلاع سے تعلق رکھنے والے عازمین حج ہاوز میں ہی قیام کرتے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ حج ہاوز کی موجودہ عمارت اور اطراف کا علاقہ 2500 افراد کے قیام کی سہولت فراہم کرنے سے قاصر ہے۔ حج ہاوز کی عمارت میں 700افراد کی گنجائش ہے جبکہ کھلی اراضی پر قائم کئے جانے والے ٹینٹ میں 300افراد کا انتظام کیا جاسکتا ہے اس طرح مزید 1000 افراد کیلئے رہائش کا انتظام کرنا دشوار کن مرحلہ ہے۔ حج کمیٹی نے حج ہاوز سے متصل زیر تعمیر کامپلکس کے 3فلورس کو استعمال میں لینے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس کے باوجود بھی بیک وقت اس قدر بڑی تعداد میں عازمین کیلئے انتظام کرنا ممکن نہیں لہذا تلنگانہ حج کمیٹی نے سنٹرل حج کمیٹی سے شیڈول میں تبدیلی کی خواہش کی ہے۔جاریہ سال پہلی مرتبہ ایر انڈیا کی فلائیٹس عازمین کیلئے مختص کی گئیں لہذا ایر انڈیا کے عہدیدار بھی انتظامات کے بارے میں فکر مند ہیں کیونکہ انہیں عازمین حج کی خدمات کا کوئی تجربہ نہیں ہے۔

TOPPOPULARRECENT