Monday , August 21 2017
Home / شہر کی خبریں / عازمین حج کی سہولتوںکیلئے بہترانتظامات کرنے چیف منسٹر کی ہدایت

عازمین حج کی سہولتوںکیلئے بہترانتظامات کرنے چیف منسٹر کی ہدایت

پہلے تربیتی اجتماع سے ڈپٹی چیف منسٹر محمود علی‘ مفتی خلیل احمد‘پروفیسر ایس اے شکور اور دیگر کا خطاب

حیدرآباد 23 اپریل ( سیاست نیوز ) نائب وزیر اعلیٰ جناب محمد محمود علی نے کہا ہے کہ حکومت تلنگانہ عازمین حج کی خدمت اور مدد کو اپنے لئے اعزاز سمجھتی ہے وہ ان کی مقدس سفر پر روانگی کے انتظامات اور دیکھ بھال کیلئے ہرممکن اقدامات کریگی‘ اور اس مقصد کیلئے حکومت کے پاس عزم و ارادہ اور پیسہ کی کمی نہیں ہے۔ وہ آج تلنگانہ حج کمیٹی کے زیر اہتمام منتخب عازمین حج کے پہلے تربیتی اجتماع کو مخاطب کررہے تھے جو ہائی ٹیک گارڈن فنکشن ہال ‘ اولڈ ملک پیٹ نزد پانی کی ٹانکی‘ عقب ریس کورس گراؤنڈ میں منعقد ہوا ۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعلیٰ کے چندر شیکھر راؤ کو بھی حجاج کرام کی فلاح و بہبود سے گہری دلچسپی ہے اور انہو ںنے عازمین کی روانگی کے انتظاما ت کو کامیاب بنانے بہترین انتظامات کرنے کی ہدایت دی ہے ۔ وہ ہمیشہ سے ہی حاجیوں کی خیر و عافیت کے بارے میں معلومات حاصل کیا کرتے ہیں۔ انہوںنے کہا کہ چیف منسٹر کی ہدایت پر ہی مکہ معظمہ میں رباط کا مسئلہ حل کیا گیا‘ جس سے سینکڑوں حجاج کرام کو سہولت حاصل ہوئی۔ وہ کوشش کریں گے کہ اس سال رباط میں 1284حجاج کرام کے قیام کے انتظامات ہو جائیں ۔ جناب محمود علی نے کہا کہ عازمین حج اللہ کی طلبی پر ہی سفر حج پر جارہے ہیں ‘ کیونکہ ہزاروں درخواست گزاروں میں ان کا انتخاب عمل میں آیا ہے۔ انہوں نے عازمین کو مشورہ دیا کہ وہ سفر حج کے دوران صبر و سکون کا مظاہرہ کریں کیونکہ اس سفر کے دوران مشکلات اور تکلیفیں پیش آنا ضروری ہے ۔ انہوں نے عازمین حج کی روانگی کیلئے ملک بھر میں بہترین انتظامات کرنے پر اسپیشل آفیسر تلنگانہ اسٹیٹ حج کمیٹی پروفیسر ایس اے شکور کی ستائش کی۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے عازمین سے 12فیصد تحفظات کی کامیابی کیلئے دعا کرنے کی اپیل کی ۔ مولانا مفتی خلیل احمد شیخ الجامعہ نظامیہ نے فضایل حج و عمرہ بیان کرتے ہوئے عازمین کرام کو مشورہ دیا کہ وہ نماز اور دیگر فرائض کی پابندی کریں۔ حج ایک مقدس فرض ہے اور اس میں اللہ اور رسول کریم ﷺ کی رضا کو مقدم رکھنا چاہئے۔ حج کیلئے اخلاص اور رزق حلال لازمی ہیں۔ رزق حلال کے بغیر نہ حج قبول ہوتا ہے اور نہ زکواۃ قبول ہوتی ہے۔ انہو ں نے کہا کہ حج کے تین فرائض ہیں احرام‘ وقوف عرفات اور طواف زیارت ان میں سے کوئی ایک بھی دانستہ یا نادانستہ یا کسی مجبوری کی وجہہ سے چھوٹ جائے تو حج ادا نہیں ہوتا۔ انہوں نے کہا کہ نماز اور روزہ بدنی عبادتیں ہیں ‘ زکواۃ مالی عبادت ہے اور حج بدنی اور مالی دونوں پر مشتمل ہے۔ متعلقہ رکن اسمبلی نے عازمین کو مبارکباد دی ۔اسپیشل آفیسر تلنگانہ اسٹیٹ حج کمیٹی پروفیسر ایس اے شکور نے خیر مقدم کیا اور کہا کہ سارے ملک میں تلنگانہ حج کمیٹی عازمین کی روانگی کے بہترین انتظامات کرتی ہے جس پر اس کو ایوارڈ بھی عطا کئے گئے ہیں اور اس کی کارکردگی کو سارے ملک میں مثالی قرار دیا جاتا ہے۔ حج کمیٹی اس سال بھی عمدہ ترین انتظامات کرے گی۔ انہوںنے کہا کہ ڈپٹی چیف منسٹر جناب محمود علی کی دلچسپی کی وجہ سے رباط کا مسئلہ حل ہوا۔ کزشتہ سال 600 عازمین نے رباط میں قیام کیا تھا۔ اس سال تین عمارتیں حاصل کرکے 1286 حجاج کرام کے قیام کا انتظام کیا جارہا ہے‘ جس کیلئے ماہ مئی کے پہلے ہفتہ میں قرعہ اندازی ہوگی۔ ریاست کے حجاج کرام دوسرے مرحلہ میں براہ جدہ مکہ معظمہ روانہ ہوں گے۔ اس سال منیٰ میں حجاج کرام کیلئے خیموں میں تین وقت کا کھانا سربراہ کیا جائیگا۔ مولانا حافظ عبدالرشید طلحہ نعمانی نے فضایل و آداب زیارت روضہ نبوی ﷺ مدینہ منورہ پر روشنی ڈالتے ہوئے عازمین کو مشورہ دیا کہ وہ اس مقدس ترین سرزمین پر پورے ادب و احترام کا مظاہرہ کریں اور اپنے کسی قول یا فعل کے ذریعہ یہ ظاہر نہ کریں کہ ان سے دانستہ یا نادانستہ طور پر کسی قسم کی بے ادبی ہورہی ہو۔ مولانا عبدالرحمان ازہری نے مناسک حج و عمرہ پر تفصیلی روشنی ڈالی اور عازمین سے کہا کہ وہ ان تفصیلات کو ذہن نشین کرلیں ان کو دوران حج کوئی پریشانی نہیں ہوگی۔ جناب فصیح الدین بابا ڈپٹی میئر نے کہا کہ عازمین حج انتہائی خوش نصیب ہیں جن کو حج اور زیارت روضہ نبوی ﷺ کی سعادت حاصل ہورہی ہے۔ محترمہ طیبہ آفندی رکن مرکزی حج کمیٹی اور ڈاکٹر جویریہ فاطمہ بھی موجود تھیں ۔ حافظ صابر پاشاہ اور حافظ عبدالنعیم کی قرأت کلام پاک اور حافظ محمد انصار انور کی نعت شریف سے اجتماع کی کارروائی کا آغاز ہوا۔ جناب فاروق علی حسامی نے ا حرام کی شرائط بیان کیں اور احرام باندھنے کا عملی مظاہرہ کیا۔خاتون عازمین کی کثیر تعداد بھی اس تربیتی اجتماع میں شریک تھی جن کیلئے علیحدہ انتظام کیا گیا تھا۔ جناب عرفان شریف حج کمیٹی نے آخر میں شکریہ ادا کیا ۔

TOPPOPULARRECENT