Wednesday , September 20 2017
Home / شہر کی خبریں / عالمی سطح پر آئی ٹی صنعت میں ہندوستانی نوجوانوں کی تخفیف میں اضافہ

عالمی سطح پر آئی ٹی صنعت میں ہندوستانی نوجوانوں کی تخفیف میں اضافہ

حیدرآباد کے ملازمین متفکر ، آسٹریلیا اور امریکہ کی پالیسی پر عمل
حیدرآباد۔12مئی (سیاست نیوز) عالمی سطح پر آئی ٹی صنعت میں خدمات انجام دے رہے ہندستانی نوجوانوں کو ملازمتوں سے محروم کرنے کی کاروائی میں اب تشویشناک حد تک اضافہ ہو چکا ہے اور ملٹی نیشنل کمپنی میں خدمات انجام دے رہے نوجوان اپنے روزگار کے متعلق متفکر رہنے لگے ہیں۔ ہندستان کے مختلف شہروں کے علاوہ بیرون ملک موجود ملٹی نیشنل کمپنیوں میں جہاں ہندستانی نوجوان ملازمت انجام دے رہے ہیں اب وہ ان کمپنیو ںمیں اپنی ملازمت کو خطرہ محسوس کرنے لگے ہیں۔ بنگلور‘ حیدرآباد‘ چینائی ‘ نوئیڈا کے علاوہ دیگر شہروں میں موجود ایم این سی میں ملازمین کی تخفیف کا عمل جاری ہے اور حیدرآباد میں موجود کمپنیوںمیں خدمات انجام دینے والے ملازمین بھی اپنی ملازمت کے متعلق فکر مند نظر آرہے ہیں۔بتایا جاتا ہے کہ امریکہ اور آسٹریلیاء کی پالیسی میں لائی جانے والی تبدیلیوں کے اثرات ان ملٹی نیشنل کمپنیوں کی معاشی حالت پر بڑنے لگے ہیں کیونکہ ان دونوں ممالک نے اپنے ملک میں خدمات انجام دینے والی کمپنیوں کو مقامی نوجوانوںکی قابلیت میں اضـافہ کے ذریعہ انہیں ملازمتیں فراہم کرنے کا پابند بنانے کا فیصلہ کیا ہے ۔ ملک میں خدمات انجام دینے والی ٹیکنالوجیکل کمپنیو ںکے دورکے آغاز کے ساتھ ہی آئی ٹی صنعت میں زبردست اچھال دیکھا جا تا رہا ہے لیکن ان حالات میں اچانک بیرونی کمپنیوں کی جانب سے ملازمتوں میں تخفیف کی جاتی ہے تو ایسی صورت میں قریب ایک لاکھ سے زائد نوجوانوں کو اپنے روزگار سے محرومی کا خدشہ ہے۔ امریکہ میں ملازمتوں کے متعلق قوانین میں ترمیم کے فوری بعد آسٹریلیاء کی جانب سے بیرون ملک ملازمین کی خدمات کے حصول کیلئے کئے جانے والے فیصلہ کے بعد آئی ٹی صنعت میں تیز رفتار تبدیلی دیکھی جا رہی ہے اور بعض کمپنیاں تو ان حالات میں خدمات کی انجام دہی جاری رکھنے کے متعلق از سر نو غور کرنے لگی ہیںکیونکہ مقامی ملازمین کی بھرتی کے بعد کمپنی کی جانب سے مزید بھرتیوں کی کوئی گنجائش باقی نہیں ہوتی لیکن جو حالات تبدیل ہو رہے ہیں ان کو دیکھتے ہوئے ماہرین کا کہنا ہے کہ اگر پالیسیوں میں تبدیلی نہیں لائی جاتی ہے تو ایسی صور ت میں ان آئی ٹی کمپنیوں کو بھاری نقصانات کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے اسی لئے کمپنیاں اپنے بچاؤ کیلئے ملازمین میں تخفیف کر رہی ہیں۔ بعض کمپنیوں میں خدمات انجام دینے والے ملازمین نے کمپنیوں کی جانب سے شروع کردہ ان اقدامات کے متعلق مقامی قوانین کے تحت متعلقہ ادارو ںمیں شکایات درج کروانی شروع کردی ہے جس کے سبب محکمہ لیبر کے عہدیداروں نے بعض کمپنیوں کے نمائندوں کو طلب کرتے ہوئے ان سے مذاکرات بھی شروع کر دیئے ہیں کہ اور انہیں ہندستانی قوانین کے متعلق واقف کرواتے ہوئے ملازمین کے حقوق کے متعلق واقف کروانے کی کوشش کی جا رہی ہے لیکن کئی کمپنیوں کے ذمہ داروں کا کہنا ہے کہ ملازمت کی فراہمی کے وقت ہی ملازمین کو اس بات سے واقف کروا دیا جا تا ہے کہ انہیں مختصر نوٹس پر نوکری سے برخواست کیا جا سکتا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT