Thursday , August 24 2017
Home / عرب دنیا / عالمی سفر کی آخری منزل کیلئے قاہرہ سے شمسی

عالمی سفر کی آخری منزل کیلئے قاہرہ سے شمسی

توانائی سے پرواز کرنے والے طیارہ کی روانگی
قاہراہ ۔24جولائی ( سیاست ڈاٹ کام )  پہلا شمشی توانائی سے پرواز کرنے والا طیارہ امپلس ۔2  مصر سے اپنی آخری منزل کیلئے ابوظہبی پرواز کرگیا ۔ سوئٹزرلینڈ کے پائیلٹ برٹرنڈ اور سوئٹزرلینڈ صنعت کار آنگرے بورسگر باری باری سے اس طیارہ کو 22ہزار میل کے سفر کے دوران اڑاتے رہے ہیں ۔ یہ طیارہ دنیا بھر کے سفر پر روانہ ہوا تھا ۔ قبل ازیں یہ پہلی بحراوقیانوس کے پار شمسی توانائی کے ذریعہ پرواز کرنے کی مہم کے پہلے مرحلہ کے اختتام پر سیول میں رکا تھا ۔ اس میں صرف ایک نشست ہے اس کا وزن کار سے زیادہ نہیں ہے ۔ اس کے پروں کی لمبائی بوائنگ 747 طیارہ کے پروں کے مساوی ہے اوراس میں شمسی توانائی کے 17ہزار سیلس ہیں ۔ اس کی طویل پرواز  کے دوران بیاٹری میں ذخیرہ کی ہوئی شمسی توانائی اس کے کام آتی ہے ۔ اس رفتار 30میل یا 48کلومیٹر فی گھنٹہ ہے ۔ حالانکہ اگر تیز دھوپ نکلی ہوئی ہو تو یہ رفتار دگنی بھی کی جاسکتی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT