Friday , June 23 2017
Home / تفریح / عالیہ بھٹ

عالیہ بھٹ

زیادہ لوگ تو یہی جانتے ہیں کہ بالی ووڈ ایکٹریس عالیہ بھٹ مشہور فلم ڈائرکٹر مہیش بھٹ اور سونی راز داں کی دختر ہے اور انہوں نے فلموں میں آتے ہی آتے کامیابی حاصل کی اور آج وہ اپنی اداکارانہ صلاحیتوں کی وجہ انڈسٹری میں پوری طرح سے مضبوط پوزیشن پر قائم ہے، لیکن یہاں ہم بتادیں کہ عالیہ بھلے ہی 23 سال کی ہو لیکن بالی ووڈ ایکٹریس کہلانے سے پہلے وہ ایک برٹش فلم ایکٹریس اور سنگر بھی ہے وہ اپنی قومیت بھی برطانیہ کی ہی رکھتیں ہیں۔ عالیہ نے یوں تو ہندی فلموں میں بطور چائلڈ آرٹسٹ فلم سنگھرش سے ہی کام کرنا شروع کردیا، لیکن انہیں لوگوں نے کرن جوہر کی ہٹ فلم اسٹوڈنٹ آف دا ایر سے پہچانا جو 2012ء میں ریلیز ہوئی تھی۔ اس کے بعد ان کی 2 اسٹیٹس، ہمپٹی شرما کی دلہنیاں، کپور اینڈ سنس، ہائی وے، شاندار، ڈیر زندگی، اڑتا پنجاب میں اپنی بہترین اداکاری سے لوگوں کا دل جیت لیا۔ فی الحال ان کی رومانٹک کامیڈی فلم بدری ناتھ کی دلہنیاں 10 مارچ کو ریلیز ہو رہی ہے جس میں عالیہ ورون دھون کے ساتھ آرہی ہیں۔ ششانگ کھیتان کے ڈائرکشن میں بنی اس فلم سے عالیہ کو بہت ساری توقعات ہیں۔ اس فلم کی تکمیل کے ساتھ ہی عالیہ اپنی ایک اور فلم ڈراگن کی شوٹنگ میں مصروف ہوگئی ہیں۔ آئیے ملتے ہیں اپنی اس فلم کے پرموشن میں مصروف اداکارہ سے۔
س : بدری ناتھ کی دلہنیاں کے بارے میں بتائیے ؟
ج : یہ میرے کیریئر کی 13 ویں فلم ہے ۔ میں نے بالی ووڈ میں بطور ایکٹریس اپنے ایکٹنگ کیریئر کی شروعات 2012ء میں فلم اسٹوڈنٹ آف دا ایئر سے کی اور پانچ سال میں میں نے تیرہ فلمیں کی ہیں۔ اور ہر فلم نے میرے تعلق سے اچھا اثر چھوڑا لوگوں نے اداکاری کو سراہا اور مجھے اس مقام تک پہنچایا۔ اب بدری ناتھ کی دلہنیاں سے بھی توقع ہے جو ایک بھرپور رومانٹک اور کامیڈی فلم ہے۔ یہ دراصل 2014ء میں آئی ہمپٹی شرما کی دلہنیاں کا سیکویل ہے، لیکن یہ بہت خوب ہے۔ لوگ دیکھ کر بہت لطف لیں گے۔ ششانک کھیتان نے بطور ڈائرکٹر اس فلم پر خوب محنت کی ہے۔ ورون کے ساتھ میری جوڑی کو بھی لوگ پسند کریں گے۔
س : ورون دھون کے ساتھ کام کرنا کیسا لگتا ہے؟
ج : میری شروعات ہی اسی کے ساتھ ہوئی وہ ایک صاف دل نوجوان ہے۔ اس میں بہت ساری صلاحیتیں ہیں۔ وہ ہنس مکھ ہے۔ جلد ہی کسی سے بھی گھل مل جاتا ہے وہ آج کا کامیاب اداکار ہونے کے باوجود بہت معاون ہے۔ مجھ سے وہ کافی کلوز ہے۔
س :  بدری ناتھ کی دلہنیاں سے آپ کیا توقع کرتی ہیں؟
ج : اس میں کوئی دو رائے نہیں میری یہ فلم لوگ ضرور پسند کریں گے اور اس کے باکس آفس پر نتائج بھی اچھے رہیں گے۔ ہم نے جتنا محنت کرنا تھا کی ہم نے تو اپنا بسٹ دے دیا اب شائقین سے امید کرتے ہیں کہ وہ اسے کامیاب بنائیں ۔
س :  آپ کو بنا جدوجہد کے فلم انڈسٹری میں کام مل گیا اور کامیابی بھی کیا لگتی ہے اس کی وجہ؟
ج : لوگ سمجھتے ہیں کہ بھٹ فیملی سے ہونے کی وجہ سے مجھے فلموں میں آسانی سے کام مل گیا یا مل رہا ہے، ایسا نہیں یہاں میں ٹیلنٹ کے لئے کام حاصل کررہی ہوں۔ بڑے بڑے اسٹار بیٹے اور بیٹیاں گھر بیٹھے ہوئے ہیں، فلمساز انہی اداکاروں کو کاسٹ کرتے ہیں جن کا مارکٹ چل رہا ہوتا ہے۔ بہرحال مجھے انڈسٹری کے لئے پہلا بریک ملنا ہی کافی تھا پھر تو لوگ فلم دیکھتے ہی آپ کو پرکھ لیتے ہیں۔ میرے خیال سے چار پانچ فلموں کے بعد اگر آپ چاہتے ہیں کہ انڈسٹری آپ کو اپنالے تو یہ آپ کے کام پر منحصر کرتا ہے کہ ان فلموں میں آپ نے کیا کیا ہے میں اس معاملہ میں لکی رہی ہوں کہ مجھے کام کرنے کے لئے اچھے لوگ ملے ۔ میرے پاس وہ سب کچھ ہے جس سے لوگ متاثر ہوسکتے ہیں۔
س : کیا فلموں میں آنے سے قبل آپ نے سوچا تھا کہ آپ کو انڈسٹری میں اس قدر کامیابی مل جائے گی؟
ج : مجھے پتہ نہیں کہ میں اتنا خبروں میں کیوں ہو ںویسے اخبارات کے پیج تھری پر جگہ پانے کے لئے ہی میں ممبئی نہیں آئی لوگ یہاں بہت بڑا فلمسٹار بننے کا خواب لے کر آتے ہیں لیکن میں نے کوئی بڑا خواب نہیں دیکھا لیکن کامیابی ملتی گئی اور مل رہی ہے۔
س : آپ نے ابھی تک کے اپنے کیریئر میں صرف ہلکے پھلکے رومانٹک کردار ہی کئے ہیں، کیا کبھی کرینہ اور کاجول کی طرح چیلنج بھرے کردار نبھانے کا ارادہ بھی ہے؟
ج :ابھی تو میری شروعات بھی ٹھیک طرح سے نہیں ہوئی ہے، میں نے ابھی تک جملہ کتنی فلمیں کی ہیں جب کرینہ یا کاجول کی طرح مجھے بھی یہاں لمبا عرصہ ہو جائے گا اس بارے میں سوچوں گی۔ فی الحال تو میں جس طرح کے کردار اور فلمیں کررہی ہوں ان سے ہی خوش ہوں۔ ذاتی طور پر بھی مجھے ہلکے پھلکے کامیڈی اور رومانٹک کردار ہی پسند ہیں۔
س : ایک ہٹ فلم کا فارمولہ کیا ہوتا ہے یہ تو اب آپ کی سمجھ میں آچکا ہو گا؟
ج : ہٹ فلم کا میرے خیال سے کوئی فارمولہ نہیں ہوتا۔ اگر ہوتا تو کوئی بھی اپنے پاس ناکامی کو پھٹکنے ہی نہ دیتا۔ کچھ لوگ کہتے ہیں کہ سخت محنت کے ذریعہ کامیابی حاصل کی جاسکتی ہے، لیکن میں ایسا نہیں مانتی کیونکہ کئی بار سخت محنت کرتے ہیں، پھر بھی ناکامی سامنے کھڑی ہوکر منہ چڑھاتی ہے۔
س :  آپ کی نظر میں کامیابی کا کیا مطلب ہے؟
ج :کامیابی کی میرے لئے بہت اہمیت ہے یہ اس بات پر منحصر کرتی ہے کہ جو کچھ بھی میں کرتی ہوں لوگ اسے کتنا پسند اور کتنا ناپسند کرتے ہیں۔ میں سخت محنت کرتی ہوں لیکن اس کے باوجود میں زیادہ توقعات نہیں رکھتی ۔ اسی لئے میں کامیابی کو بھی اسی نظریہ سے دیکھتی ہوں۔
س : موجودہ طور پر آپ جس قدر مصروف ہیں آپ کو اسی وقت اپنی کامیابی کو کیش کرنا چاہئے؟
ج : میں یہ نہیں سمجھتی کہ مجھے اپنی کامیابی کو کیش کرنے کا یہ وقت ہے۔ میرا ماننا ہے کہ یہ ساری باتیں آپ پر منحصر ہیں ۔ میرے لئے تو یہ فلمیں حاصل کرنے کا بہترین وقت ہوگا۔ بیس فیصد فلمیں سائن کرکے کوئی بھی بہترین فنکار نہیں بن جاتا۔ میرا ماننا ہے کہ فنکار کو ایسے ہی وقت اپنی کوالٹی پر توجہ دینی چاہئے۔
س :  کیا آپ ریئل اور ریل لائف میں ایک جیسی ہی ہیں؟
ج : ہاں بلکہ میں اس سے زیادہ شرارتی ہوں جیسی فلموں میں دکھائی دیتی ہوں۔ میرے لئے اچھی بات یہ ہے کہ میرے اپنوں نے مجھے پر موٹ نہیں کیا ہے۔ کئی لوگوں نے مجھے مایوس کرنے کی کوشش کی لیکن وہ ناکام رہے۔ مجھے قابل احترام طریقہ سے جو بھی کام ملا اسے میں نے کیا۔
س :  آپ ممی سے زیادہ قریب ہیں یا پاپا سے؟
ج : میرے لئے الگ مواقعوں پر دونوں ضروری ہیں۔ ڈیڈی سے پوچھ لیتی ہوں مجھے اپنے والدین سے اچھی تعلیم ملی ہے اور میں اس تعلیم کو اپنے پروفیشن پر حاوی ہونے نہیں دوں گی۔ میرے خیال سے پرسنل اور پروفیشنل زندگی دو الگ طرح سے جینے چاہئے کبھی کسی کو کسی میں مکس کرنا نہیں چاہئے ۔ میرے خیال سے یہی کامیابی ہوگی۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT