Saturday , October 21 2017
Home / Top Stories / عام آدمی پارٹی کے دو ارکان اسمبلی گرفتار

عام آدمی پارٹی کے دو ارکان اسمبلی گرفتار

مودی جی جھوٹے مقدمات میں جیل بھیج رہے ہیں، کجریوال کا ٹوئٹ

نئی دہلی /چندی گڑھ۔24جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) عام آدمی پارٹی کو آج زبردست دھکہ پہنچا جبکہ اس کے دو ارکان اسمبلی کو علیحدہ واقعات میں گرفتار کرلیا گیا۔ دہلی میں رکن اسمبلی امانت اللہ خان کو آج ایک خاتون کو مبینہ طور پر ٹکر دے کر ہلاک کرنے کی کوشش کے الزام کے بعد گرفتار کیا گیا ۔ جبکہ پنجاب میں ایک اور رکن اسمبلی نریش یادو کو مذہبی مقام کی بے حرمتی کے الزام میں گرفتار کیا گیا ہے۔ دہلی میں ایک خاتون نے بتایا کہ وہ برقی کٹوتی کے مسئلہ کی شکایت لیکر امانت اللہ خان کی رہائش گاہ پہنچی تھی جب وہ واپس ہورہی تھیں تو پیچھے سے ایک گاڑی نے انہیں ٹکر دینے کی کوشش کی ۔ اس کے ساتھ ہی عام آدمی پارٹی کے گرفتار ارکان اسمبلی کی تعداد 11ہوگئی ہے ۔ امانت اللہ خان تو پہلے پوچھ گتھ کیلئے حراست میں لیا گیا تھا ۔ ایک دن بعد انہوں نے ایک پریس کانفرنس میں الزام  عائد کیا کہ اس خاتون نے ان کے خلاف جھوٹا بیان دے کر پولیس کے ذریعہ دباؤ ڈالا تھا ۔ 22جولائی کو خاتون نے مجسٹریٹ کے سامنے تعزیرات ہند کی دفعہ 164 کے تحت  اپنا بیان قلمبند کروایا تھا اور اس نے الزام عائد کیا تھا جب وہ ایم ایل اے کی رہائش گاہ سے واپس ہورہی تھیں ایک گاڑی اس کو کچل کر جانے کی کوشش کی اور اس گاڑی میں امانت اللہ خان بیٹھے ہیوئے تھے ۔ جوائنٹ کمشنر پولیس ساؤتھ ایسٹ رینج آر پی اوپادھیا نے یہ بات بتائی ۔ اس سے پہلے اس خاتون نے 19جولائی کو پولیس میں شکایت درج کروائی تھی اورالزام عائد کیا تھا کہ عام آدمی پارٹی ایم ایل اے کی رہائش گاہ جامعہ نگر میں ایک نوجوان نے 10جولائی کو اس کے ساتھ بدتمیزی کی اور دھمکی دی کہ اگر اس نے اس معاملہ کو سیاسی رنگ دینے کی کوشش کو بند نہیں کیا تو اسے مار دیا جائے گا ۔ اس سلسلہ میں پولیس نے ایف آئی آر درج کرلیا ۔

مجسٹریٹ کو بیان دینے کے بعد اس ایف آئی آر سی دفعہ 308 کو بھی شامل کرلیا گیا ۔ یہ ایک غیر ضمانتی الزام ہے اور ہم نے خان کو گرفتار کرلیا ہے  ۔ امانت اللہ خان کی گرفتاری پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے اروند کجریوال نے ٹوئیٹر پر لکھا ہے کہ مودی جی نے ایک اور عام آدمی پارٹی ایم ایل اے کو گرفتار کرلیا ۔ انہوں نے ہندی زبان میں مزید لکھا ہے کہ گجرات میں آنندی بین ‘ دلتوں اور پٹہ داروں کو جھوٹے کیسوں میں جیلوں میں ڈال رہی ہیں ۔ مودی جی جھوٹے کیوں ہیں ‘ دلتوں کو جیلوں میں ڈال رہے ہیں ۔ دہلی اور گجرات اب دونوں مل کر لڑیں گے ۔ خاتون نے کل  پولیس میں 3شکایت درج کروائی کہ اس کو نامعلوم افراد سے دھمکیاں دی جارہی ہیں ۔
اس کی وجہ سے خاتون کو سیکیورٹی فراہم کی گئی ۔ خاتون جسولہ کی رہنے والی ہے ‘ گذشتہ ہفتہ پولیس میں کی گئی شکایت میں اس نے کہا تھاکہ اس نے 10جولائی کو امانت اللہ خان کو فون کیا تھا اور بعد ازاں ان کے بائلہ ہاؤز رہائش گاہ گئیں تھی تاکہ ان کے گھر میں برقی کٹوتی کا مسئلہ اٹھاسکیں ۔ اس نے دعویٰ کیا کہ وزیر نے ان سے ملاقات نہیں کی ‘ جب وہ واپس ہورہی تھیں تو گھر سے ایک نوجوان باہر آکر انہیں گالی گلوج کی اور جان سے مارنے کی دھمکی دی ۔ بعدازاں جامعہ نگر پولیس اسٹیشن میں تعزیرات ہند  کی دفعات 506 اور 509 کے تحت کیس درج کیا گیا تھا ۔ امانت اللہ خان نے بتایا کہ وہ اس خاتون کو نہیں جانتے ۔ اگر اس نے میرے گھر پہنچ کر شکایت کی تھی تو اس میں بھی واقف نہیں ہوں ۔
دلتوں پر حملوں میں ملوث 2بجرنگ کارکن سمیت 7کے خلاف مقدمہ
چکمگلور ( کرناٹک) ۔24 جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) دلت خاندان پر حملہ کرنے کے الزام میں پولیس نے بجرنگ دل کے دوکارکنوں کے بشمول 7 افراد کے خلاف کیس درج رجسٹرڈ کیاہے ۔ گاؤکش کے الزام میں حال ہی میں دلت خاندان کو ان کے گھر میں زدوکوب کیا گیا تھا ‘ پولیس نے بتایا کہ یہ مبینہ حملہ اس وقت ہوا جب گجرات کے انا مقام پر دلتوں پر حملے کرنے پر احتجاج کیا جارہا تھا ۔دلتوں پر الزام عائد کیا گیاہے کہ انہوں نے مبینہ طور پر گائے کی کھال نکالی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT