Wednesday , May 24 2017
Home / سیاسیات / عام آدمی پارٹی سڑکوں سے بھی کام کرنے کیلئے تیار

عام آدمی پارٹی سڑکوں سے بھی کام کرنے کیلئے تیار

پارٹی کو دفتر الاٹمنٹ کی منسوخی بڑی سازش کا حصہ: کجریوال۔ سرکاری فنڈس کا بیجا استعمال ، بی جے پی کا الزام
نئی دہلی 8 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) چیف منسٹر دہلی اروند کجریوال نے آج کہاکہ عام آدمی پارٹی کے دفتر کے الاٹمنٹ کی منسوخی اِس پارٹی کا ’’صفایا‘‘ کردینے کی بڑی سازش کا حصہ ہے۔ اُنھوں نے کہاکہ پارٹی کو برسر اقتدار مافیا کا مقابلہ کرنے اور غریبوں کا ساتھ دینے پر نشانہ بنایا جارہا ہے، اور دعویٰ کیاکہ عام آدمی پارٹی سڑکوں پر رہتے ہوئے بھی کام کرنے تیار ہے۔ کجریوال حکومت کی جانب سے عام آدمی پارٹی کو الاٹ کردہ دفتر گزشتہ روز لیفٹننٹ گورنر کی جانب سے منسوخ کردیا گیا جبکہ شونگلو کمیٹی نے اِس الاٹمنٹ میں بے قاعدگیوں کی نشاندہی کی ہے۔ کجریوال نے تعجب کیاکہ کیوں کانگریس اور بی جے پی کے متعدد دفاتر اور پلاٹس ہیں حالانکہ سیاست میں اُن کی موجودگی برائے نام ہے۔ اُنھوں نے اپنی قیامگاہ پر پریس کانفرنس میں بتایا کہ یہ آزاد ہندوستان میں یقینا پہلی مرتبہ ہونا چاہئے کہ کسی برسر اقتدار پارٹی کو اسی ریاست میں جہاں اُس کا اقتدار ہے، دفتر کے لئے جگہ دینے سے انکار کیا گیا ہے۔ کجریوال نے اِس منسوخی کو عام آدمی پارٹی کے انتخابی وعدے سے مربوط کیاکہ میونسپل کارپوریشن میں 23 اپریل کو انتخابات کے بعد برسر اقتدار آنے پر امکنہ ٹیکس برخاست کردیا جائے گا۔ ’’وہ ہمیں ختم کردینا چاہتے ہیں۔ عام آدمی پارٹی کا صفایا چاہتے ہیں لیکن ایسا نہیں ہوگاکیونکہ ہم حق پر ہیں۔ عوام اُنھیں چناؤ میں سبق سکھائیں گے۔ اِس دوران ایم سی ڈی الیکشن سے قبل بی جے پی نے آج الزام عائد کیاکہ عام آدمی پارٹی حکومت نے چیف منسٹر کجریوال کی قیامگاہ پر گزشتہ سال ظہرانوں کے سلسلہ میں سرکاری فنڈس کا بیجا استعمال کیااور فی شخص 13 ہزار روپئے کی لاگت والا لنچ فراہم کیا گیا۔ جس کی عام آدمی پارٹی نے تردید کی۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT