Monday , August 21 2017
Home / شہر کی خبریں / !عبدالقیوم خاں کو رکن پارلیمنٹ بنانے جانے کا امکان

!عبدالقیوم خاں کو رکن پارلیمنٹ بنانے جانے کا امکان

حیدرآباد ۔ 25 ۔ اکٹوبر : ( سیاست نیوز ) : جاریہ سال کے آخر میں وظیفہ پر سبکدوش ہونے والے سینئیر آئی پی ایس عہدیدار عبدالقیوم خاں کی خدمات میں کوئی اضافہ کا امکان نہیں ہے ؟ باوثوق ذرائع کے مطابق اے کے خان کو سرکاری نہیں بلکہ سماجی خدمات کا موقع دیا جائے گا ۔ اقلیتی اقامتی اسکولس کو کامیاب بنانے کا سہرا اپنے سر باندھنے والے اس سینئیر آئی پی ایس عہدیدار کو رکن پارلیمنٹ بنائے جانے کا قوی امکان ہے ۔ اگر ٹی آر ایس پارٹی میں چل رہی چہ میگوئیوں پر بھروسہ کیا جائے تو ایسا لگتا ہے کہ چیف منسٹر نے اس طرح کا پہلے ہی فیصلہ کرلیا ہے چونکہ جاریہ ماہ چیف منسٹر نے اپنے فارم ہاوز پر اقلیتی قائدین کا ایک اجلاس طلب کیا تھا اور اس میں کارپوریشن اور بورڈز کے عہدوں پر اقلیتی قائدین کو نامزد کرنے کی خوشخبری دی تھی اور ساتھ ہی پارٹی کو مضبوط کرنے اور اقلیتی کیڈر کو اپنی جماعت کا اٹوٹ حصہ بنانے کی غرض سے پہل کرتے ہوئے ارکان اسمبلی کی تعداد میں اضافہ اور ساتھ ہی اپنی جماعت کے ایک رکن پارلیمنٹ کے تقرر کا بھی اشارہ دے دیا تھا ۔ چیف منسٹر کے اس اشارے کے بعد پارٹی میں نامزد عہدوں کے لیے کوششیں اور سرگرمیاں عروج پر پہونچ گئیں ہیں۔سینیئر آئی پی ایس عہدیدار نے تشکیل تلنگانہ کے بعد چیف منسٹر کی جانب سے دی گئی ہر ذمہ داری کو بخوبی نبھایا اور سیاسی خصومت کے الزامات کا سامنا کرنے والے اے سی بی کی کارروائی میں بھی محتاط طرز عمل اختیار کرتے ہوئے چیف منسٹر کے بااعتماد رفقاء میں اپنا نام شامل کروالیا ۔ اس کے علاوہ باوقار اقلیتی اقامتی اسکولس کی اسکیم میں بھی اے کے خاں نے بہترین رول ادا کرتے ہوئے اِسے کامیاب بنایا۔ اُنھوں نے شادی مبارک اسکیم کی دھاندلیاں منظر عام پر لاتے ہوئے مستحقین تک سرکاری مراعات پہونچانے میں اہم رول ادا کیا۔ ان خدمات کو دیکھتے ہوئے سمجھا جاتا ہے کہ چیف منسٹر نے عبدالقیوم خاں کے نام پر سنجیدگی سے غور کررہے ہیں ۔ چیف منسٹر کا ماننا ہے کہ تعلیم یافتہ ، باصلاحیت ، سینئیر آئی پی ایس عہدیدار اور ایک ڈپلومیٹ اور مسلم سماج میں وقار کی نظر سے دیکھے جانے والی شخصیت کے انتخاب سے مسلم طبقہ ، پارٹی کے مزید قریب ہوگا اور اے کے خاں کو رکن پارلیمنٹ بنانے پر ٹی آر ایس کی حلیف جماعت کو بھی کوئی اعتراض نہیں ہوگا۔ تاہم دوسری طرف چیف منسٹر کے فارم ہاوز پر اقلیتی قائدین کی دعوت اور چیف منسٹر کے تیقن و اشاروں کے بعد پارٹی قائدین میں عہدوں کے لیے نمائندگیاں اور سرگرمیاں تیز ہوگئی ہیں ۔ وزیر آئی ٹی کے ٹی آر کے دورہ امریکہ سے واپسی کے بعد سرگرمیاں تیز ہوگئی ہیں اور پارٹی قائدین مختلف کارپوریشنوں اور بورڈ کے لئے صدر نشین کے لیے اپنی اپنی دعویداری پیش کرنے میں جٹ گئے ہیں ۔ امکان ہے کہ چیف منسٹر بہت جلد اس بارے میں فیصلہ کریں گے ۔۔

TOPPOPULARRECENT