Monday , August 21 2017
Home / ہندوستان / عبدالکریم ٹونڈا الزامات منسوبہ سے بری

عبدالکریم ٹونڈا الزامات منسوبہ سے بری

نئی دہلی 5 مارچ ( سیاست ڈاٹ کام ) دہلی کی ایک عدالت نے آج لشکرطیبہ کے مبینہ کارکن عبدالکریم ٹونڈا کو ان کے خلاف درج چوتھے اور آحری مقسدمہ میں بھی بری کردیا ۔ ٹونڈا پر دہلی پولیس نے ملک میں مختلف مقامات پر بم دھماکوں میں ملوث رہنے کا الزام عائد کیا تھا ۔ 73 سالہ ٹونڈا ان 20 دہشت گردوں میں شامل تھے جنہیں ہندوستان نے پاکستان سے اسکے حوالے کرنے کی خواہش کی تھی ۔ ٹونڈا کوایک عدالت میں الزامات منسوبہ سے بری کردیا گیا ۔ عدالت نے کہا کہ ٹونڈا کے خلاف مقدمہ چلانے کیلئے بادی النظر میں کوئی ثبوت موجود نہیں ہے ۔ ٹونڈا کے خلاف حکومت نے 1996 میں انٹرپول کی ریڈ کارنر نوٹس بھی جاری کی تھی ۔ ٹونڈا فی الحال دہشت گردی سے متعلق مقدمات میں عدالتی تحویل میں ہے ۔ عدالت نے ٹونڈا کے خسر محمد ذکریا اور ان کے دو قریبی ساتھیوں کو بھی الزامات منسوبہ سے بری کردیا ۔ دہلی پولیس کے اسپیشل سیل کی جانب سے ملزمین کے خلاف تعزیرات ہند کی مختلف دفعات کے تحت مقدمات درج کئے تھے جن میں ملک سے جنگ کرنے کا سنگین الزامات اور آرمس ایکٹ کے دفعات بھی شامل تھے ۔ چارچ شیٹ میں الزام عائد کیا گیا تھا کہ ٹونڈا کی ہدایت پر دوسرے تین ملزمین نے پاکستانی اور بنگلہ دیشی شہریوں کی مدد کی تھی جو مبینہ طور پر 1997 میں ہوئے بم دھماکوں میں ملوث تھے ۔

TOPPOPULARRECENT