Sunday , October 22 2017
Home / شہر کی خبریں / عثمانیہ یونیورسٹی اور جے این ٹی یو ٹاپ رینک سے محروم

عثمانیہ یونیورسٹی اور جے این ٹی یو ٹاپ رینک سے محروم

حیدرآباد ۔ 5 ۔ اپریل : ( سیاست نیوز ) : مرکزی وزارت فروغ انسانی وسائل کی طرف سے ملک کے تعلیمی اداروں کی جو رینکنگ جاری کی گئی ہے اس میں حیرت انگیز طور پر جواہر لال نہرو ٹکنالوجیکل یونیورسٹی JNTU اور عثمانیہ یونیورسٹی کالج آف انجینئرنگ کے نام شامل نہیں ہیں ۔ آندھرا پردیش کی تقسیم تک جے این ٹی یو سب سے بڑی یونیورسٹی تھی اس کے وسائل بہترین اور اس کے طلبہ بہترین مانے گئے ہیں ۔ دو سال قبل جے این ٹی یو حیدرآباد پر شدید تنقید ہوئی تھی جب کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے انجینئرنگ تعلیم کے معیار پر سخت نکتہ چینی کی تھی ۔ اس تنقید کے بعد ایک سو سے زیادہ کالجس کی اجازت دینے سے انکار کیا گیا تھا ۔ یہ مسئلہ سپریم کورٹ تک گیا جہاں کالجس نے یونیورسٹی کے فیصلہ کو چیلنج کیا بھلے ہی کالجس کو کچھ راحت ملی ہو لیکن جے این ٹی یو کی ساکھ کو نقصان پہونچا ۔ ماہرین تعلیم نے کہا کہ اس صورتحال میں ہزارہا طلبہ ٹاملناڈو کی ڈیمڈ یونیورسٹیز میں داخلہ لینے پر مجبور ہوئے اور ان میں سے بیشتر یونیورسٹیز کو اب ایک سو ٹاپ یونیورسٹیز میں جگہ ملی ہے ۔ عثمانیہ یونیورسٹی جو تلنگانہ ایجی ٹیشن کا مرکز رہی ملک میں 33 ویں مقام پر ہے جو ایک سو سال سے قائم اس تعلیمی ادارہ کے لیے لمحہ فکر ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT