Saturday , October 21 2017
Home / Top Stories / عثمانیہ یونیورسٹی سہ روزہ صدسالہ تقاریب کاآج آغاز

عثمانیہ یونیورسٹی سہ روزہ صدسالہ تقاریب کاآج آغاز

صدر جمہوریہ پرنب مکرجی مہمان خصوصی ، سیکورٹی کے سخت انتظامات ، پروگرام متاثر کرنے کیخلاف طلبہ کو انتباہ

حیدرآباد۔25 اپریل (پی ٹی آئی ؍ سیاست نیوز) عثمانیہ یونیورسٹی صد سالہ تقاریب کا کل آغاز ہورہا ہے اور صدرجمہوریہ پرنب مکرجی مہمان خصوصی ہوں گے۔ اس کے علاوہ انگلش اینڈ فارن لینگویجس یونیورسٹی (ایفلو) کے پہلے کانوکیشن میں بھی شرکت کریں گے۔ 26 تا 28 اپریل منعقد ہونے والے صد سالہ تقاریب کے تین روزہ پروگرام کی تفصیلات جاری کردی گئی ہیں جس کے تحت 26 اپریل  دوپہر 12:30 تا 1:30 بجے دن افتتاحی تقریب منعقد ہوگی۔ صدر جمہوریہ پرنب مکرجی مہمان خصوصی ، گورنر ای ایس ایل نرسمہن تقریب کی صدارت کریں گے جبکہ مہمانان اعزازی میں چیف منسٹر کے چندر شیکھر رائو، ڈپٹی چیف منسٹر کڈیم سری ہری، رکن پارلیمنٹ ڈاکٹر کے کیشو رائو اور میئر حیدرآباد بی رام موہن شامل ہیں۔ صدرجمہوریہ کے عثمانیہ یونیورسٹی پہنچنے پر وائس چانسلر پروفیسر ایس رام چندرم اور رجسٹرار پروفیسر گوپال ریڈی استقبال کریں گے۔ استقبالیہ کمیٹی کے صدرنشین اور رکن راجیہ سبھا ڈاکٹر کے کیشو رائو کی تعارفی تقریر ہوگی۔ ڈپٹی چیف منسٹر ووزیر تعلیم کے سری ہری مرکزی مملکتی وزیر لیبر اینڈ ایمپلائمنٹ بنڈارو دتاتریہ اور چیف منسٹر کے چندر شیکھر رائو کی تقاریر ہوں گی۔ گورنر ای ایس ایل نرسمہن انگلش، اردو اور تلگو میں سووینیئر اور عثمانیہ یونیورسٹی کی تصنیفات کی رسم اجراء انجام دیں گے۔ گورنر ای ایس ایل نرسمہن کی تقریر کے بعد صدر جمہوریہ پرنب مکرجی کا خطاب ہوگا۔ دوپہر 12 بجے سے نصف گھنٹے تک عثمانیہ یونیورسٹی پر ڈاکیو منٹری پیش کی جائے گی جبکہ صبح 10:30 بجے سے 12 بجے تک کلچرل پروگرامس پیش کیئے جائیں گے۔ صدر جمہوریہ کی آمد کے سلسلہ میں عثمانیہ یونیورسٹی اور اس کے اطراف و اکناف سخت ترین حفاظتی انتظامات کئے جارہے ہیں۔ سکیوریٹی حکام نے اس علاقے کو اپنے کنٹرول میں لے لیا ہے۔ عثمانیہ یونیورسٹی نے رات دیر گئے ایک بیان میں کہاکہ پروگرام کو متاثر کرنے کی کسی بھی کوشش کا سخت نوٹ لیا جائے گا اور تادیبی کارروائی جائے گی۔ ضرورت پڑنے پر طالب علم کو برطرف بھی کیا جاسکتا ہے۔ رجسٹرار عثمانیہ یونیورسٹی نے طلبہ برادری اور دیگر تمام سے اپیل کی ہے کہ پروگرام کے کامیاب انعقاد کے لئے یونیورسٹی انتظامیہ کے ساتھ تعاون کریں۔ افتتاحی پروگرام کے بعد سہ پہر تین بجے تا 5 بجے شام ٹیگور آڈیٹوریم میں دوسرا سیشن ہوگا جس کے مہمان خصوصی سابق مرکزی وزیر ایس جئے پال ریڈی ہوں گے۔ رکن راجیہ سبھا ڈاکٹر کے کیشو رائو صدارت کریں گے۔ اس اجلاس میں عثمانیہ یونیورسٹی سے متعلق مختلف موضوعات پر پروفیسر محمد سلیمان صدیقی سابق وائس چانسلر عثمانیہ یونیورسٹی، پروفیسر کے ناگیشور ایڈیٹر ان چیف ایچ ایم ٹی وی، ڈاکٹر ایس چندر شیکھر، شریمتی رنجنا کمار، ڈاکٹر آر ایس پروین کمار آئی پی ایس اور ایس ایم عارف بیاڈمنٹن کوچ کی تقاریر ہوں گی۔ 27 اپریل کو دوسرے دن صبح 10 بجے پہلا لکچر منعقد ہوگا۔ وزیر فینانس ای راجندر مہمان خصوصی ہوں گے اور شریمتی رنجیو آر آچاریہ اسپیشل چیف سکریٹری حکومت تلنگانہ صدارت کریں گی۔ نوبل ایوارڈ یافتہ عبدالستار بن موسی تکثیری جمہوریت کی تعمیر کے موضوع پر لکچر دیں گے۔ دوسرا لکچر 11:45 بجے ہوگا۔ ہندوستانی خلائی ادارہ اسرو کے صدرنشین اے ایس کرن کمار ’ہندوستان خلا میں‘ کے عنوان پر خطاب کریں گے۔ 3 بجے سہ پہر عثمانیہ یونیورسٹی کے سابق طلبہ کا اجلاس ہوگا۔ گورنر مہاراشٹرا سی ایچ ودیا ساگر راؤ مہمان خصوصی ہوں گے جبکہ مرکزی وزیر بنڈارو دتاتریہ اور سابق مرکزی وزیر ایس جئے پال ریڈی مہمانان اعزازی ہوں گے۔ 4 بجے شام آل انڈیا وائس چانسلرس کانفرنس کا آغاز ہوگا۔ وزیر فروغ انسانی وسائل پرکاش جائوڈیکر مہمان خصوصی ہوں گے۔ صدرنشین تلنگانہ کونسل فار ہائیر ایجوکیشن ٹی پاپی ریڈی اور وائس چانسلر عثمانیہ یونیورسٹی پروفیسر ایم رام چندرم اعزازی مہمان ہوں گے۔ شام 6:30 تا 9:30 بجے شب کلچرل پروگرام ہوگا۔ 28 اگست کو تیسرے دن آل انڈیا وائس چانسلرس کانفرنس کا ٹیکنیکل سیشن اور عثمانیہ یونیورسٹی ویژن پر پینل ڈسکشن ہوگا۔ شام 6 بجے اختتامی تقریب منعقد ہوگی۔

TOPPOPULARRECENT