Thursday , July 27 2017
Home / شہر کی خبریں / عثمانیہ یونیورسٹی کی صد سالہ تقاریب کو عید و تہوار کی طرز پر منانے کی ہدایت

عثمانیہ یونیورسٹی کی صد سالہ تقاریب کو عید و تہوار کی طرز پر منانے کی ہدایت

تلنگانہ اور یونیورسٹی کا چولی دامن کا ساتھ ، مخلوعہ جائیدادوں پر تقررات کا اعلان ، وزیر تعلیم کڈیم سری ہری
حیدرآباد ۔ 20 ۔ اپریل : ( سیاست نیوز ) : ڈپٹی چیف منسٹر کڈیم سری ہری نے عثمانیہ یونیورسٹی کی صد سالہ تقاریب کو عید و تہوار کی طرح منانے کی عہدیداروں کو ہدایت دی ۔ مخلوعہ جائیدادوں پر فوری تقررات کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ تلنگانہ اور عثمانیہ یونیورسٹی کا ایک دوسرے سے چولی دامن کا ساتھ ہے ۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے آج سکریٹریٹ میں اعلیٰ عہدیداروں کا اجلاس طلب کرتے ہوئے 26 تا 28 اپریل تک منعقد کئے جانے والے عثمانیہ یونیورسٹی صد سالہ تقاریب کا جائزہ لیا ۔ سہ روزہ تقاریب کے انعقاد کے بعد سال بھر تک صد سالہ تقاریب منانے کا بھی فیصلہ کیا گیا ۔ کڈیم سری ہری نے کہا کہ عثمانیہ یونیورسٹی کا ملک کی قدیم و تاریخی یونیورسٹیز میں شمار ہوتا ہے ۔ تعلیمی اعتبار سے عثمانیہ یونیورسٹی کو ملک میں ساتواں اور جنوبی ہند میں تیسرا مقام حاصل ہے ۔ اس یونیورسٹی سے فارغ التحصیل طلبہ نے مختلف شعبوں میں اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوایا ہے اور اس یونیورسٹی نے ملک کے لیے کئی اہم قائدین کو پیش کیا ہے ۔ عثمانیہ یونیورسٹی کی صد سالہ تقاریب کے لیے ٹی آر ایس حکومت نے بجٹ میں 200 کروڑ روپئے مختص کئے ہیں ساتھ ہی اسی بجٹ میں عثمانیہ یونیورسٹی کے علاوہ اس سے الحاق رہنے والے کالجس کے نئے ہاسٹلس تعمیر کرنے کی منظوری دی گئی ہے ۔ عثمانیہ یونیورسٹی کے احاطے میں نئے سنیٹری بلاکس اکیڈیمک بلاکس اور ہاسٹلس میں بنیادی سہولتیں فراہم کی جارہی ہے ۔ نئی تعمیرات کا 26 اپریل کو صدر جمہوریہ پرنب مکرجی سنگ بنیاد رکھیں گے اور عثمانیہ یونیورسٹی کے صد سالہ تقاریب کی افتتاحی تقریب میں صدر جمہوریہ پرنب مکرجی ، گورنر ای ایس ایل نرسمہن ، چیف منسٹر کے سی آر مہمان خصوصی شرکت کریں گے ۔ 27 اپریل کو منعقد ہونے والے اجلاس میں گورنر مہاراشٹرا ودیا ساگر راؤ مہمان خصوصی کی حیثیت سے شرکت کریں گے ۔ 28 اپریل کو منعقد ہونے والے آل انڈیا وائس چانسلرس کے اجلاس میں مرکزی وزیر فروغ انسانی وسائل پرکاش جاوڈیکر مہمان خصوصی شرکت کریں گے ۔ ڈپٹی چیف منسٹر کڈیم سری ہری نے عثمانیہ یونیورسٹی ایمپلائز کی تنخواہوں میں اضافہ میں چارجس کے بقایاجات منسوخ کرنے کے علاوہ دوسرے مسائل پر بہت جلد فیصلہ کرنے کا اعلان کیا ۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر نے تمام بقایا جات کو منسوخ کردیا ہے ۔ تقریبا صد فیصد میس چارجس میں اضافہ کیا گیا ہے ۔۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT