Wednesday , June 28 2017
Home / شہر کی خبریں / عثمانیہ یونیورسٹی کے ملازمین کے دیرینہ مسائل حل کرنے کا مطالبہ

عثمانیہ یونیورسٹی کے ملازمین کے دیرینہ مسائل حل کرنے کا مطالبہ

کنٹراکٹ ملازمین مستقل ملازمت کے منتظر ، عبدالقدیر خاں کی پریس کانفرنس
حیدرآباد۔ 8 مارچ (سیاستنیوز) جامعہ عثمانیہ ملازمین کے مسائل کو حل کرنے کے ساتھ ساتھ انہیں دیگر سرکاری ملازمین کی طرح سہولتوں کی فراہمی کا اعلان کیا جانا چاہئے ۔عثمانیہ یونیورسٹی این جی اوز اسوسیشن نے موجودہ وائس چانسلر جامعہ عثمانیہ پروفیسر ایس رامچندرم کے تقرر پر حکومت سے اظہار تشکر کرتے ہوئے دیگر مسائل کے حل کو بھی ممکن بنانے کی اپیل کی ہے۔نائب عبدالقدیر خان نائب صدر عثمانیہ یونیورسٹی این جی اوز اسوسیشن و صدر تلنگانہ یونیورسٹیز غیر تدریسی ملازمین اسوسیشن نے بتایا کہ عرصہ دراز سے یونیورسٹی میں خدمات انجام دے رہے کنٹراکٹ ملازمین اپنی خدمات کو مستقل بنائے جانے کا انتظار کررہے ہیں۔اسی طرح دیگر امور میں سرکاری ملازمین کے طرز پر یونیورسٹی ملازمین کو سہولتیں حاصل نہیں ہیں ۔انہوں نے بتایا کہ جامعہ عثمانیہ کی صد سالہ تقاریب کے انعقاد کے سلسلہ میں جاری تیاریوں کے دوران ریاستی حکومت کو ملازمین اور عملہ کے مسائل کے حل کے متعلق بھی منصوبہ بندی کرنی چاہئے تاکہ ملازمین کی حالت کو بہتر بنایا جاسکے۔جناب عبدالقدیر خان نے بتایا کہ عثمانیہ یونیورسٹی کے تدریسی و غیر تدریسی عمل کو امکنہ اسکیم کی فراہمی کے علاوہ انہیں ہیلت کارڈ کی سہولت کی فراہمی کے متعلق اعلانات کی توقع کی جا رہی ہے اور کہا جا رہا ہے کہ حکومت کی جانب سے ملازمین کے مفادات کے تحفظ کے علاوہ عثمانیہ یونیورسٹی کی ترقی کیلئے حکمت عملی کا اعلان کیا جائے گا۔انہوں نے بتایا کہ جامعہ عثمانیہ میں خدمات انجام دینے والی مختلف تنظیموں کے ذمہ داروں کی جانب سے وائس چانسلر کے تقرر پر خوشی کا اظہار کیا جا رہا ہے کیونکہ حکومت نے انتہائی حرکیاتی اور سنجیدہ شخص کو یہ اہم ذمہ داری تفویض کی ہے اور ہر تنظیم کا احساس ہے کہ جامعہ عثمانیہ صدی تقاریب کے حکومت یونیورسٹی ملازمین کے فنڈس کی اجرائی کے علاوہ دیگر اعلانات کرے گی۔انہوں نے بتایا کہ ملازمین کے مسائل کے حل کے لئے مختلف تنظیموں بالخصوص تلنگانہ یونیورسٹیزنان ٹیچنگ ایمپلائز اسوسیشن نے حکومت سے نمائندگی کرتے ہوئے خواہش کی ہے کہ ملازمین کیلئے امکنہ اسکیم کے علاوہ ہیلت کارڈ کی فوری اجرائی کو ممکن بنانے کے علاوہ کنٹراکٹ ملازمین کو باقاعدہ بنانے کے اقدامات کئے جائیں تاکہ صدی تقاریب کی خوشیوں میں ملازمین کو شامل کیا جاسکے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT