Thursday , September 21 2017
Home / سیاسیات / عدلیہ اور حکومت میں کوئی محاذ آرائی نہیں

عدلیہ اور حکومت میں کوئی محاذ آرائی نہیں

کانگریس ہرگذرتے دن کیساتھ مقبولیت کھو رہی ہے : وینکیا نائیڈو
گوالیار۔ 14 جون (سیاست ڈاٹ کام) مرکزی وزیر وینکیا نائیڈو نے آج کہا کہ عدلیہ اور حکومت کے مابین کوئی محاذ آرائی نہیں ہے۔ کانگریس کا تذکرہ کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ صدر سونیا گاندھی باصلاحیت لیڈر ہیں لیکن ان میں اعتماد کا فقدان ہے۔ انہوں نے ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ عدلیہ اور حکومت کے مابین کوئی محاذ آرائی نہیں ہے۔ ہمیں عوامی خط اعتماد حاصل ہوا ہے اور اسی کے مطابق ہم کام کررہے ہیں۔ وہ سپریم کورٹ کولیجیم کی کئی تجاویز کو مرکزی حکومت کی جانب سے مسترد کئے جانے کی اطلاعات کے بارے میں سوال کا جواب دے رہے تھے۔ حکومت دہلی کے اس بل کے بارے میں جس میں پارلیمنٹری سیکریٹری کے عہدہ کو منفعت بخش عہدہ کے زمرہ سے نکال دیا گیا اور جسے صدرجمہوریہ نے منظور کرنے سے انکار کیا، وینکیا نائیڈو نے کہا کہ یہ بل غیردستوری ہے۔ اب ایسا لگتا ہے کہ چیف منسٹر دہلی اروند کجریوال کو اس کا اندازہ ہوگیا ہے۔ جب ان سے بی جے پی زیراقتدار چھتیس گڑھ میں بھی اسی طرح کے تقرر کی اطلاعات کے بارے میں پوچھا گیا تو انہوں نے کہا کہ اس طرح کے تقررات دستور کے خلاف ہیں۔ کانگریس کا تذکرہ کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہر گذرتے دن کے ساتھ یہ سکڑتی اور کمزور ہوتی جارہی ہے۔ پارٹی سے بڑے پیمانے پر اخراج عمل میں آرہا ہے۔ پارٹی عوامی مقبولیت کھو رہی ہے اور اس کا طرز عمل پارلیمنٹ کے اندر اور عوام میں منفی ہے۔ انہوں نے کہا کہ صدر کانگریس سونیا گاندھی ایک بہترین اور باصلاحیت لیڈر ہیں لیکن ان میں اعتماد کی کمی پائی جاتی ہے۔

TOPPOPULARRECENT