Wednesday , August 16 2017
Home / عرب دنیا / عراق میں امریکی فوج کشی کے کلیدی دلال احمد چلابی کا انتقال

عراق میں امریکی فوج کشی کے کلیدی دلال احمد چلابی کا انتقال

بغداد ۔ 3 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) عراق میں امریکی فوج کشی کیلئے دلالی کرنے والا احمد چلابی کا قلب پر حملہ کے باعث انتقال ہوگیا۔ یہ وہ شخص تھا جس نے امریکہ کو یہ غلط اطلاعات پہنچائیں کہ عراق کے پاس عام تباہی کے ہتھیار موجود ہیں اور اس طرح عراق پر امریکی حملہ کی راہ ہموار کی تھی۔ اس موقع پر عراقی پارلیمنٹ نے بھی 71 سالہ قانون ساز کی موت کی توثیق کرتے ہوئے انہیں خراج عقیدت پیش کیا۔ مرحوم فینانس کمیٹی کے سربراہ تھے۔ عراقی نیشنل کانگریس کے سربراہ ہونے کے باوجود انہوں نے جلاوطنی میں زندگی گذاری۔ عراقی نیشنل کانگریس صدام حسین کی شدید مخالف تھی۔ اس طرح چلابی امریکہ کیلئے ایک پسندیدہ شخصیت بن گئے کیونکہ انہوں نے امریکہ کو جو معلومات فراہم کیں اسی کو بنیاد بنا کر امریکہ نے 2003ء میں عراق پر اپنی فوج کشی کو حق بجانب قرار دیا تھا۔ حالانکہ چلابی کی جانب سے امریکہ کو فراہم کردہ یہ رپورٹ کہ عراق کے پاس عام تباہی والے ہتھیار موجود ہیں، غلط ثابت ہوئی تھی۔ یہی وہ وقت تھا جب چلابی پر امریکہ نے اعتماد کرنا چھوڑ دیا کیونکہ صدام حسین سے القاعدہ کے مبینہ روابط کی جھوٹی اطلاع بھی چلابی نے ہی امریکہ کو فراہم کی تھی۔ چلابی پر 1992ء میں ان کے غیاب میں اردن میں بھی ایک مقدمہ چلایا گیا تھا اور انہیں سزاء بھی سنائی گئی تھی کیونکہ ایک بینک کے دیوالیہ ہونے میں انہیں ہی ذمہ دار قرار دیا گیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT