Thursday , September 21 2017
Home / جرائم و حادثات / عرب باشندوں سے شادی کروانے کا شاخسانہ ،14 افراد بشمول دو بھائی گرفتار

عرب باشندوں سے شادی کروانے کا شاخسانہ ،14 افراد بشمول دو بھائی گرفتار

مائیلاردیو پلی میں ریاکٹ بے نقاب ، انسپکٹر پولیس جگدیشور کی پریس کانفرنس
حیدرآباد ۔ /24 اگست (سیاست نیوز) شادی کے نام پر دھوکہ دینے کی کوشش میں ملوث دو بھائیوں بشمول 14 افراد کو پولیس نے گرفتار کرلیا ۔ شہر اور نواحی علاقوں میں کم عمر لڑکیوں سے عرب باشندوں کی شادیوں کے واقعات آئے دن پیش آتے جارہے ہیں ۔ مائیلاردیوپلی پولیس نے اس طرح کے ایک اور ریاکٹ کو بے نقاب کردیا اور دوبئی سے تعلق رکھنے والے 2 بھائیوں 52 سالہ سلیم عبید سعید شملان اور 48 سالہ ابراہیم عبید شملان کے علاوہ 60 سالہ حبیب علی ساکن ایرہ کنٹہ پہاڑی شریف جو قاضی بتایا گیا ہے کے علاوہ عرب شیخوں کو شادی کیلئے لڑکیاں فراہم کرنے اور ان سے شادی کے رشتے طئے کروانے والے شخص 51 سالہ محمد شفیع کو گرفتار کرلیا ۔ اس سلسلہ میں گرفتار کو میڈیا کانفرنس میں پیش کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر آف پولیس شمس آباد زون محترمہ پدمجا نے بتایا کہ گرفتار عرب باشندوں کے قبضہ سے چند دستاویزات بھی ضبط کرلئے گئے ہیں ۔ اگست کی /10 تاریخ کو سلیم عبید سعید شملان حیدرآباد شادی کرنے کی غرض سے آیا اور اس کا رابطہ شفیع سے ہوا ۔ شفیع نے اکبر کالونی مائیلاردیوپلی علاقہ کی ساکن نازیہ بیگم کے افراد خاندان سے رابطہ قائم کیا اور لڑکی کی شادی کیلئے عرب باشندے کا رشتہ پیش کیا ۔ ڈی سی پی کے مطابق سلیم نے شفیع کو 70 ہزار روپئے دیئے اور شفیع نے نازیہ کے افراد خاندان کو 40 ہزار روپئے ادا کئے اور 10 ہزار روپئے کمیشن کی اساس پر قاضی نے شادی کروائی ۔ انہوں نے بتایا کہ دوبئی لے جانے کا جھانسہ دے کر اس نے لڑکی سے دھوکہ دہی کی اور شادی کرلی جس کے بعد سلیم عبید کا بھائی ابراہیم عبید بھی شادی کیلئے حیدرآباد پہونچ گیا ۔ پولیس نے انہیں سنگین الزامات کے تحت گرفتار کرلیا ہے ۔ تاہم اس سارے معاملہ میں شکایت خود ایک سب انسپکٹر پولیس نے دی ہے ۔ اس پریس کانفرنس میں انسپکٹر مائیلاردیوپلی مسٹر جگدیشور و دیگر موجود تھے ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT