Friday , September 22 2017
Home / شہر کی خبریں / عرس حضرات یوسفینؒ کے انتظامات ، متولی کے حق میں جاری کردہ حکم التواء واپس

عرس حضرات یوسفینؒ کے انتظامات ، متولی کے حق میں جاری کردہ حکم التواء واپس

وقف بورڈ کو انتظامات کی ذمہ داری ، ہائی کورٹ میں مقدمہ کی سماعت
حیدرآباد۔11 اگست (سیاست نیوز) حیدرآباد ہائی کورٹ میں تلنگانہ وقف بورڈ کو درگاہ حضرات یوسفین کے عرس کے انتظامات کی اجازت دیتے ہوئے سابق متولی فیصل علی شاہ کے حق میں جاری کردہ حکم التوا واپس لے لیا ہے۔ جسٹس سیتارام مورتی کے اجلاس پر آج اس مقدمے کی سماعت ہوئی۔ ہائی کورٹ نے 13 جولائی کو فیصل علی شاہ کی درخواست پر انہیں معطل کرنے سے متعلق وقف بورڈ کے احکامات پر حکم التوا جاری کردیا تھا۔ وقف بورڈ نے اس فیصلے کے خلاف اپیل دائر کی تھی اور اس معاملے میں بورڈ کو کامیابی حاصل ہوئی۔ وقف بورڈ کے اسٹینڈنگ کونسل ایم اے مجیب نے بحث کرتے ہوئے عدالت کو بتایا کہ فیصل علی شاہ کو 2014ء میں متولی کے عہدے سے علیحدہ کردیا گیا جس کے بعد وقف ٹریبیونل میں انہیں کوئی راحت نہیں ملی۔ اس مدت کے دوران وقف بورڈ نے ایک عارضی متولی کا تقرر کیا تھا جس کی میعاد 29 جولائی کو ختم ہوچکی ہے۔ فی الوقت کوئی بھی متولی نہیں ہے اور وقف بورڈ نے انتظامات اپنی راست نگرانی میں لے لی ہے۔ انہوں نے کہا کہ 12 اگست سے درگاہ کے عرس کی تیاریوں کا رسم جھیلہ سے آغاز ہوگا اور عدالت کے حکم التوا کے باعث وقف بورڈ کو عرس کے انتظامات میں دشواری پیش آسکتی ہے۔ فیصل علی شاہ کے وکیل پانڈو رنگارائو نے حکم التوا کی برقراری کے حق میں بحث کی تاہم معزز جج نے عرس کے انتظامات میں وقف بورڈ کی دشواری کا حوالہ دیتے ہوئے حکم التوا کو واپس لے لیا۔ عارضی متولی کی جانب سے مقدمہ میں شمولیت کے لیے علیحدہ درخواست پیش کی گئی جس کی عدالت نے سماعت نہیں کی۔ مقدمہ کی آئندہ سماعت یکم ستمبر کو ہوگی۔

TOPPOPULARRECENT