Wednesday , September 20 2017
Home / شہر کی خبریں / عرس حضرات یوسفینؒ کے سلسلہ میں رسم جھیلہ، صدرنشین وقف بورڈ نے مراسم انجام دیئے

عرس حضرات یوسفینؒ کے سلسلہ میں رسم جھیلہ، صدرنشین وقف بورڈ نے مراسم انجام دیئے

حیدرآباد۔/12اگسٹ، ( سیاست نیوز) عرس حضرات یوسفینؒ کے سلسلہ میں آج رسم جھیلہ انجام دی گئی جس میں صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم اور چیف ایکزیکیٹو آفیسر منان فاروقی نے حصہ لیا۔ ہائی کورٹ کی جانب سے متولی کے حق میں جاری کردہ حکم التواء سے دستبرداری کے بعد بورڈ نے عرس کے انتظامات اپنی راست نگرانی میں انجام دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ صدرنشین وقف بورڈ نے بارگاہ حضرات یوسفینؒ میں چادر گل اور غلاف پیش کیا اور فاتحہ خوانی کی۔ اس موقع پر فیصل علی شاہ نے ان کی اور چیف ایکزیکیٹو آفیسر کی گلپوشی اور شال پوشی کی۔ جھیلہ کو درگاہ شریف سے قدم رسول پنجہ شاہ روانہ کیا گیا جہاں سے اس کی واپسی دوبارہ درگاہ شریف عمل میں آتی ہے۔ رسم جھیلہ کے ساتھ عرس تقاریب کا عملاً آغاز ہوگیا۔ عرس کی تقاریب 28 تا 30 اگسٹ منائی جائیں گی۔ چیف ایکزیکیٹو آفیسر کی جانب سے غیر مجاز افراد کو درگاہ کے انتظامات میں مداخلت سے روکنے پولیس میں دی گئی درخواست کے سبب رسم جھیلہ میں شرکت سے پولیس نے فیصل علی شاہ کو روک دیا۔درگاہ شریف میں حاضری کے بعد وہ واپس ہوگئے۔ ان کے ہمراہ معتقدین کی کثیر تعداد موجود تھی جو وقف بورڈ کے رویہ پر ناراضگی کا اظہار کررہے تھے۔ اس موقع پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم نے کہا کہ عرس کے سلسلہ میں موثر انتظامات کئے جارہے ہیں اور زائرین کی سہولت کیلئے وقف بورڈ ہمیشہ مستعد و چوکس رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ عرس کے انتظامات کی نگرانی کیلئے وقف بورڈ کے عہدیداروں پر مشتمل کمیٹی تشکیل دی گئی ہے جو دن رات درگاہ کے اُمور پر نگرانی رکھے ہوئے ہے۔ محمد سلیم نے کہا کہ عرس تقاریب میں زائر کی حیثیت سے کوئی بھی شرکت کرسکتا ہے لیکن انتظامات اور مراسم عرس وقف بورڈ کی جانب سے انجام دیئے جائیں گے۔ رسم جھیلہ کے موقع پر پولیس کے وسیع تر انتظامات کئے گئے تھے تاکہ درگاہ کے احاطہ میں کسی بھی تنازعہ کو روکا جاسکے۔ محمد سلیم نے بتایا کہ عرس کے انتظامات کے سلسلہ میں کمیٹی کی تشکیل یا متولی کے تقرر کے مسئلہ پر 19 اگسٹ کو وقف بورڈ کی ذیلی کمیٹی کے اجلاس میں غور کیا جائے گا۔ چیف ایکزیکیٹو آفیسر منان فاروقی نے بتایا کہ عرس کے موقع پر وضو خانہ ، طہارت خانے اور دیگر مقامات کی صفائی پر خصوصی توجہ دی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ قبروں کی بے حرمتی کو روکنے کیلئے وقف بورڈ مستعدی سے اقدامات کررہاہے ۔ قبروں پر دکانات لگانے کی اجازت نہیں ہوگی۔

TOPPOPULARRECENT