Saturday , August 19 2017
Home / ہندوستان / عشرت جہاں مقدمہ کی تحقیقات میں دوماہ کی توسیع

عشرت جہاں مقدمہ کی تحقیقات میں دوماہ کی توسیع

نئی دہلی ۔ 18جولائی (سیاست ڈاٹ کام) سینئر آئی اے ایس عہدیدار بی کے پرساد جو عشرت جہاں مقدمہ کے لاپتہ فائلس کی تحقیقات کررہے ہیں ‘انہیں وزیراعظم نریندر مودی نے دو ماہ کی توسیع دے دی ۔ جب کہ مرکزی وزیرداخلہ راجناتھ سنگھ نے تین ماہ کی توسیع دینے کی سفارش کی تھی ۔ کابینی سکریٹری پی کے سنہا کے نام معتمد داخلہ راجیو مہرشی نے کہا تھا کہ پرساد کا متبادل تلاش کرنا آسان نہیں ہوگا اور تحقیقاتی عہدیدار کی تبدیلی فی الحال نامناسب ہوگی ۔ ایک گواہ نے مبینہ طور پر تقریباً تین ماہ سے صورتحال تبدیل کردی ہے ۔ تین ماہ کی توسیع کی سفارش کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ تحقیقات انتہائی حساس ہیں اور رپورٹ پر پارلیمنٹ میں بحث کی جائے گی ۔ محکمہ پرسونل اینڈ ٹریننگ نے پرساد کی توسیع کی درخواست وزیراعظم کو روانہ کردی تھی جہاں انہوں نے صرف دوماہ کی توسیع کی منظوری دی ۔ وزارت داخلہ نے 14مارچ کو جاریہ سال پرساد کو لاپتہ فائلس کے بارے میں تحقیقات کا حکم دیا تھا ۔کمیٹی نے اپنی رپورٹ 15جون کو پیش کی تھی کیونکہ یہ انتہائی حساس تحقیقات ہے۔
اور اس بات کا امکان ہے کہ رپورٹ پر پارلیمنٹ میں مباحث منعقد کی جائیں اور معاملہ کا تجزیہ کیا جائے ۔ مہرشی نے 3مئی کے اپنے مکتوب میں کہا تھا کہ پرساد جاریہ ماہ کے اختتام پر سبکدوش ہونے والے ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT