Monday , August 21 2017
Home / شہر کی خبریں / عشرہ اول کی تراویح کے اختتام پر مساجد میں خصوصی دعائیں

عشرہ اول کی تراویح کے اختتام پر مساجد میں خصوصی دعائیں

حفاظ کرام کی گلپوشیاں۔ امت کو بازاروں کی رونق بڑھانے کی بجائے مابقی دو دہوں کے اہتمام کی تلقین
حیدرآباد۔5جون(سیاست نیوز) ماہ رمضان المبارک کے عشرۂ اولی کو بندگان خدا وند نے بدیدۂ نم طلب رحمت ‘ اتحاد امت اور غلبۂ حق کیلئے دعا کرتے ہوئے وداع کیا۔ عشرۂ اولی کے دوران جن مساجد میں نماز تراویح کے دوران تین پاروں کا اہتمام کیا گیا تھا وہاں آج خصوصی دعائے ختم قرآن کا اہتمام کیا گیا تھا کلام اللہ سنانے کی سعادت حاصل کرنے والے حفاظ اکرام کی گلپوشی کی گئی۔ دونوں شہروں کی مختلف مساجد میں دعائے ختم قرآن کے ساتھ ساتھ عالم اسلام میں امن‘ اتحاد و اتفاق کیلئے خصوصی دعائیں کی گئیں۔ تاریخی مکہ مسجد میں مولانا حافظ رضوان قریشی خطیب و امام مکہ مسجد کی امامت میں روزانہ تین پارے قرآن مجید سنائی جا رہی تھی ۔ پہلے دہے کے اختتام پر خصوصی دعاء کا انعقاد عمل میں آیا۔ مکہ مسجد وشاہی مسجد باغ عامہ کے علاوہ شہر کی دیگر مساجد جہاں عشرۂ رحمت کے دوران تین پارے سنائے جارہے تھے ان مساجد میں آج خصوصی انتظامات کئے گئے تھے۔دونوں شہروں کی بیشتر مساجد میں دعائے ختم قرآن کے ساتھ مابقی عشروں کے دوران بھی نماز تراویح کی پابندی کی تاکید کرتے ہوئے آئمہ و حفاظ اکرام نے مصلیوں کو ماہ رمضان المبارک کی اہمیت اور افادیت کے علاوہ اس ماہ مبارک کے لمحات کے بہتر استعمال کی تلقین کی ۔ جامع مسجد چوک میں مولانا حافظ سید شاہ مرتضی علی صوفی نعمانی نے عشرۂ اولی کے دوران تین پارے سنائے اور آج دعائے ختم قرآن کے علاوہ خصوصی دعائیں کی۔ تاریخی مکہ مسجد میں ماہ رمضان المبار ک کے پہلے عشرہ کے اختتام پرحسب توقع غیر معمولی اژدہام دیکھا گیا اور اس اژدھام سے نمٹنے کیلئے خصوصی انتظامات کئے گئے تھے۔رمضان المبارک کے عشرہ ٔ اولی کے اختتام کے ساتھ ہی بازاروں کی رونق میں اضافہ کرنے والوں کو علماء نے تاکید کرتے ہوئے کہا کہ اللہ کے رسول ﷺ نے اسے سب سے بڑا بد نصیب قرار دیا ہے جسے رمضان میسر آئے اور وہ اپنی مغفرت نہ کروائے۔علماء نے بازاروں کی رونق میں اضافہ کرنے کے بجائے دوسرے عشرہ کا خصوصی اہتمام کرنے کی تلقین کرتے ہوئے کہا کہ ماہ رمضان المبارک کے دوسرے عشرہ کو مغفرت کا عشرہ قرار دیا گیا ہے اسی لئے اس عشرہ کے اہتمام میں کوئی کسر باقی نہیں رکھنی چاہئے۔ اسی طرح اس ماہ مبارک کے تیسرے عشرہ کو دوزخ سے نجات کا عشرہ قرار دیا گیا ہے اسی لئے ماہ رمضان کے کسی بھی لمحہ کو ضائع ہونے سے بچانا ہی فلاح ہے۔ دونوں شہروں کی مختلف مساجد میں عشرہ ٔ رحمت کے اختتام پر شہر‘ ریاست اور ملک میں جاری حالات میں بہتری کے علاوہ امن و سلامتی کے لئے بھی دعائیں کی گئیں۔

TOPPOPULARRECENT