Tuesday , September 26 2017
Home / سیاسیات / عظیم اتحاد کی تا ئید پر مسلمانوں سے لالو پرساد کا اظہار تشکر

عظیم اتحاد کی تا ئید پر مسلمانوں سے لالو پرساد کا اظہار تشکر

نریندر مودی حکومت سے قومی یکجہتی کو خطرہ لاحق، آر جے ڈی سربراہ کا تاثر
پٹنہ ۔ 11 ۔ نومبر (سیاست ڈاٹ کام) بہار اسمبلی انتخابات میں شاندار کامیابی کے بعد راشٹریہ جنتادل سربراہ لالو پرساد یادو کی قیامگاہ پھر ایک بار اقتدار کی راہداری بن گئی ہے اور ان سے ملاقات کیلئے شعبہ جات کی مختلف شخصیتوں کا تانتا باندھا ہوا ہے ۔ جب ان کی پارٹی اقتدار میں شریک نہیں تھی تو ان کی قیامگاہ ویران اور سنسان نظر آتی تھی لیکن انتخابی نتائج کے فوری بعد سیاسی منظر اچانک تبدیل ہوگیا اور ویرانے کی جگہ آبادی ( ملاقاتیوں) نظر آرہی ہے۔ اب جبکہ عوام لالو پرساد یادو کو مبار کباد پیش کرنے کیلئے آرہے ہیں لیکن آج کا دن لالو یادو خاندان کی خوشیوں کو دوبالا کردیا جب ان کے فرزند تیجسوی یادو کی 26 ویں سالگرہ منائی جارہی ہے اور حلقہ اسمبلی راگھو پور سے کامیابی ہی ان کیلئے سالگرہ کا تحفہ ثابت ہوئی۔ لالو یادو نے اپنے ایک معاون سے کہا کہ ترون جو کہ تیجسوی یادو کی عرفیت ہے ، کی آج سالگرہ ہے۔ اسے فوراً بلاؤ۔ جیسے ہی نو منتخب رکن اسمبلی وہاں پہنچے پارٹی کے حامیوں نے پرجوش نعرے بلند کئے ۔ گو کہ وہ طویل انتخابی مہم سے تھکے ہوئے نظر آرہے تھے۔ تاہم آر جے ڈی سربراہ نے اس سوال کو ٹال دیا کہ نئی حکومت کب تشکیل دی جائے گی اور یہ صرف یہ کہا کہ ابھی کچھ وقت ہے ۔ وہ ملاقاتیوں کے پھول اور گلدستے قبول کرتے ہوئے سیلفی لے رہے ہیں، تاہم حالات کی نزاکت کو دیکھتے ہوئے سابق چیف منسٹر اور لالو یادو کی اہلیہ رابڑی دیوی نے کہا کہ دوست ، دشمن اور اب دوست بن گئے ہیں، وہ بظاہر نتیش ۔ یادو کی شراکت داری کا حوالہ دے رہی تھیں۔

انہوں نے کہا کہ ایک طویل عرصہ کے بعد ہمارے لئے خوشی کے لمحات واپس آئے ہیں اور خوشیاں ہر ایک کیلئے بالخصوص غریبوں کیلئے ہیں، اپنی قیامگاہ پر اکھٹا میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے رابڑی دیوی نے کہا کہ عوام کی چاہت سے ہمیں کامیابی نصیب ہوئی ہے ۔ انہوں نے انتخابات میں عظیم اتحاد کی تائید کرنے پر امارات شرعییہ پھلواری شریف کے وفد سے بھی اظہار تشکر کیا جبکہ ایک آر جے ڈی لیڈر نے یہ تبصرہ کیا کہ پارٹی اور اس کے سربراہ کیلئے اچھے دن واپس آگئے ہیں اور دیوالی کا تہوار ان کیلئے پیام نوید لے کر آیا ہے ۔ آر جے ڈی سربراہ کے ایک بااعتماد رفیق نے بتایا کہ 17 نومبر کو ایک چاہت تقریب بھی منعقد کی جارہی ہے ۔ بعد ازاں فرقہ پرست سیاست پر عمل پیرا ہونے پر بی جے پی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے لالو پرساد یادو نے کہا کہ بی جے پی کی ز یر قیادت اور وزیراعظم نریندر مودی کے خلاف سرگرم مہم کے باعث عظیم اتحاد کو شاندار کامیابی حاصل ہوئی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ دہلی میں حکومت چلانے والی فرقہ پرست اور فاشسٹ طاقتیں اگر مزید کچھ دن اقتدار میں برقرار رہیں گی تو ہمارا ملک پھرایک بار تقسیم کی سمت گامزن ہوجائے گا ۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ قیمتوں میں اضافہ اور معاشی سست روی کیلئے بی جے پی ذمہ دار ہے۔ لالو پرساد یادو نے یہ تاثر پیش کیا کہ بی جے پی نے 2014 ء کے انتخابات میں خوشنما خواب دکھاکر اور داغدار سیاستدانوں کی تا ئید سے کامیابی حاصل کی تھی لیکن عوام نے بہت جلد اس خواب کی حقیقت کو سمجھ لیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT