Friday , August 18 2017
Home / ہندوستان / علاقہ جموں میں چوتھے دن بھی مکمل بند اور مظاہرے

علاقہ جموں میں چوتھے دن بھی مکمل بند اور مظاہرے

پولیس اور احتجاجیوں میں تصادم ۔ بی جے پی پر عوام سے دغابازی کا الزام
جموں ۔ 3 ؍ اگسٹ (سیاست ڈاٹ کام ) علاقہ جموں میں آج بند کے چوتھے دن بھی مختلف مقامات پر پولیس اور احتجاجیوں میں تصادم ہوگیا جبکہ سنگباری کرنے والے احتجاجیوں پر پولیس نے لاٹھی چارج کر دیا ۔ ایک پولیس عہدیدار نے بتایا کہ پولیس پر سنگباری کے چند ایک واقعات پیش آئے اور پولیس بھی احتجاجیوں کو منتشر کرنے کے لئے لاٹھی چارج کردیا ۔ آل انڈیا انسٹیٹیوٹ آف میڈیکل سائینس رابطہ کمیٹی جو کہ 70 سے زائد سماجی قائدین ‘ سیاسی اور تاجروں کی تنظیموں کا مشترکہ پلیٹ فارم ہے کل شام جموں بند میں مزید 72 گھنٹوں کی توسیع کر دی ہے ۔ قبل ازیں رابطہ کمیٹی نے 31 جولائی تا 2 اگسٹ 72 گھنٹوں کا مکمل جموں بند منانے کا اعلان کیا تھا ۔ بعدازاں کل شام اس بند میں مزید 72 گھنٹوں کی توسیع کر دی گئی ۔ رابطہ کمیٹی نے جموں میں مکمل درجہ کا ایمیس (AIIMS) قائم کرنے کا مطالبہ ہے ‘ احتجاجی تحریک شروع کی ہے جس کا الزام ایک بی جے ۔پی پی ڈی پی اتحاد نے جموں کے لئے منظورہ ایمیس کی کشمیر منتقل کر ایا ہے ۔ کمیٹی کے ترجمان زوراووسنگھ نے بتایا کہ پولیس نے ہمارے سینکڑوں کارکنوں بشمول لائیرس اور ٹرانسپوٹرس کو گرفتار کرلیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ رابطہ کمیٹی کے زیر اہتمام نکالی گئی احتجاجی ریالیاں پرامن رہیں لیکن پولیس نے متعدد مقامات پر احتجاجیوں کو منتشر کرنے کے لئے طاقت کا استعمال کیا ہے ۔ دریں اثناء علاقہ جموں میں آج تجدید بند کے پیش نظر تجارتی ادارے اور دوکانات بند رکھے گئے اور سڑکوں سے عوام ٹرانسپورٹ کو ہٹا دیا گیا ۔ اگرچیکہ بند کا آغاز جمعہ سے ہوا تھا جبکہ اتوار کی شام بند میں مزید 72 گھنٹوں کی توسیع کر دی گئی ۔ احتجاجیوں نے شہر کی مختلف سڑکوں پر ٹائیرس جلا کر ٹریفک کو روک دیا ۔ ترجمان نے الزام عائد کیا کہ ہمارے پرامن بند کو کچلنے کے لئے بی جے پی پولیس کا بیجا استعمال کر رہی ہے ۔ اور ہمارے سینکڑوں کارکنوں کو محروس کر دیا جا رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی نے گذشتہ سال اسمبلی انتخابات کے موقع پر عوام سے کہا کہ وعدوں سے انحراف کر کے دغابازی کی ہے اور پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی کے ساتھ اتحاد کرتے ہوئے بی جے پی نے جموں کی عظمت کو فروخت کر دیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT