Wednesday , October 18 2017
Home / ہندوستان / علیحدگی پسندوں کے ساتھ نرم پالیسی پر تنقید

علیحدگی پسندوں کے ساتھ نرم پالیسی پر تنقید

مخالف قوم عناصر کو جیل بھیج دیا جائے، محبوبہ مفتی حکومت سے بی جے پی کا مطالبہ
جموں ۔8 جون (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی نے محبوبہ مفتی حکومت سے علیحدگی پسندوں کے ساتھ اختیار کردہ نرم پالیسی کو تبدیل کرنے پر زور دیا جس کی وجہ سے تجارت او رسیاحت متاثر ہورہی ہے۔ ریاستی بی جے پی ترجمان ویریندر گپتا نے کہا کہ علیحدگی پسندوں کو فراہم کی گئی سکیوریٹی سے دستبرداری اختیار کرتے ہوئے انہیں جیل کی سلاخوں کے پیچھے بھیج دیا جانا چاہئے۔ پارٹی نے نوجوانوں کو دہشت گرد گروپس کی طرف راغب نہ ہونے کے لئے ٹھوس اقدامات کا بھی حکومت سے مطالبہ کیا۔ انہوںنے کہا کہ مخالف ہند سرگرمیوں کے باوجود علیحدگی پسندوں کو خصوصی مراعات حاصل ہیں۔ یہاں تک کہ ریاستی حکومت انہیں خصوصی تحفظ فراہم کرتی ہے۔ حکومت کو چاہئے کہ وہ اپنی اس پالیسی پر نظرثانی کرے۔ علیحدگی پسندوں کو دی گئی سکیوریٹی سے دستبرداری اختیار کی جائے اور پبلک سیفٹی ایکٹ کے تحت مخالف قوم و مخالف سماجی سرگرمیوں میں ملوث ہونے کی بنا جیل کی سلاخوں کے پیچھے ڈال دیا جائے۔ وادیٔ کشمیر میں بار بار احتجاج، تشدد اور پاکستانی و آئی ایس پرچم لہرائے جانے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ یہ تمام واقعات علیحدگی پسندوں کے اکسانے پر ہورہے ہیں۔ حال ہی میں ایک علیحدگی پسند لیڈر نے اپنے حامیوں کے ہمراہ پولیس ملازم پر طمانچہ رسید کردیا جو سری نگر میں اپنی ڈیوٹی انجام دے رہا تھا۔ گپتا نے کہا کہ علیحدگی پسندوں کے ساتھ اختیار کردہ نرم پالیسی کی وجہ سے ایک طرف مخالف ہند طاقتوں کی حوصلہ افزائی ہورہی ہے اور دوسری طرف سکیوریٹی فورسس و عوام الناس کے حوصلے پست ہورہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT