Thursday , September 21 2017
Home / ہندوستان / علیگڑھ میں بھی دادری کی تقلید کی جائے

علیگڑھ میں بھی دادری کی تقلید کی جائے

تصادم میں ہلاک نوجوان کے لواحقین کو 40 لاکھ روپئے دینے بی جے پی کا مطالبہ
علیگڑھ ۔ 16 ۔ نومبر (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی قائدین نے آج مطالبہ کیا ہے کہ ایک متوفی نوجوان کے خاندان کو جسے حالیہ فرقہ وارانہ تصادم میں ہلاک کردیا گیا تھا ، دادری واقعہ کے متاثرین کی طرح معاوضہ ادا کیا جا ئے ۔ علیگڑھ سینئر پارٹی قائدین بشمول ایم پی ستیش گوتم نے نوجوان کے ارکان خاندان کو یہ تیقن دیا کہ 18 نومبر کو چیف منسٹر اترپردیش سے ملاقات کر کے اس مطالبہ پر زور دیں گے ۔ضلع صدر بی جے پی دیوراج سنگھ نے بتایا کہ چیف منسٹر سے نمائندگی کے موقع پر متاثرہ خاندان کے ساتھ پارٹی کے ارکان پارلیمنٹ اور مسٹر سنکتلا بھارتی بھی موجود رہیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ متوفی نوجوان گورو کے لواحقین کو کم از کم 40 لاکھ روپئے معاوضہ دیا جانا چاہئے جس طرح دادری واقعہ میں ہلاک اخلاق احمد کے خاندان کو دیا گیا تھا ۔ واضح رہے کہ علیگڑھ کے فرقہ وارانہ تشدد میں زخمی گورو 12 نومبر کو ہاسپٹل میں فوت ہوگیا تھا جبکہ پولیس نے اس تصادم کے سلسلہ میں 9 افراد کو گرفتار کرلیا۔ یہ واقعہ دیوالی کی شب آتشبازی کے مسئلہ پر پیش آیا تھا ۔ تاہم ضلع انتظامیہ نے متوفی کے لواحقین کو 10 لاکھ روپئے معاوضہ دینے کا اعلان کیا ہے جس کے ارکان خاندان گزشتہ دو یوم سے دھرنا پر بیٹھے ہوئے تھے ۔ بی جے پی قائدین کی مداخلت پر یہ احتجاج کل شب ختم کردیا ۔ دریں اثناء ڈی آئی جی علیگڑھ مسٹر گویند اگروال نے بتایا کہ پرانا شہر کے علاقہ دہلی گیٹ میں عام حالات بحال ہوگئے ہیں۔دریں اثناء بعض احتجاجیوں بشمول خواتین نے کل رات دیر گئے 15 افراد کی گرفتاری کے خلاف آج صبح کھیر روز پر راستہ روکو احتجاج کیا ۔ پولیس نے حالیہ فساد کے سلسلہ میں یہ گرفتاری عمل میں لائی ہے جبکہ ابتدائی پوچھ تاچھ کے بعد دو افراد کو رہا کردیا گیا۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT