Monday , October 23 2017
Home / شہر کی خبریں / عنبرپیٹ میں مسلم قبرستان کیلئے اراضی الاٹ کرنے کا مطالبہ

عنبرپیٹ میں مسلم قبرستان کیلئے اراضی الاٹ کرنے کا مطالبہ

حیدرآباد کلکٹوریٹ پر احتجاجی دھرنا، کلکٹر کو یادداشت کی پیشکشی، جناب سید عزیز پاشاہ کا بیان
حیدرآباد 18 نومبر (سیاست نیوز) کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا کے ایک وفد نے کلکٹر حیدرآباد اور راہول بوجا سے ملاقات کرتے ہوئے عنبرپیٹ علاقہ میں مسلم قبرستان کے لئے اراضی الاٹ کرنے کے لئے نمائندگی کی۔ قبل ازیں رکن سی پی آئی قومی عاملہ و سابق رکن پارلیمنٹ راجیہ سبھا جناب سید عزیز پاشاہ کے علاوہ تنظیم انصاف گریٹر حیدرآباد کے صدر سید کلیم الدین عسکر، کنوینر سی پی آئی نارتھ زون ڈاکٹر سدھاکر، صدر تلنگانہ ڈی وائی ایف آئی راملو یادو، ندیم اور سینکڑوں کی تعداد میں کمیونسٹ قائدین اور کارکنوں نے کلکٹریٹ دفتر حیدرآباد کے روبرو احتجاجی دھرنا بھی منظم کیا۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے جناب سید عزیز پاشاہ نے کہاکہ عنبرپیٹ میں دو بڑے مسلم قبرستان ہیں جہاں پر جگہ کی تنگی کا قبرستان انتظامیہ کی جانب سے ایک بورڈ بھی نصب کردیا گیا ہے۔ انھوں نے مزید کہاکہ عنبرپیٹ کے مذکورہ دونوں قدیم قبرستانوں کی تنگ دامنی کے سبب مقامی عوام کو تدفین کے لئے دور دراز مقامات کا انتخاب کرنا پڑرہا ہے۔ جناب سید عزیز پاشاہ نے پچھلے دنوں پیش آئی دو اموات کا بھی حوالہ دیا جس کی تدفین بارکس کے قبرستان میں عمل میں آئی۔ عزیز پاشاہ نے کہاکہ سابق میں بھی تنظیم انصاف اور کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا نے مشترکہ نمائندگی کے ذریعہ عنبرپیٹ میں دو ایکڑ وقف اراضی کی بھی نشاندہی کروائی تھی جس کو قبرستان کے لئے مختص کرنے کے لئے وقف بورڈ سے نمائندگی کی گئی تھی۔ جناب سید عزیز پاشاہ نے کہاکہ مقامی عوام کو درپیش مشکلات کے پیش نظر وقف بورڈ کی جانب سے اس ضمن میں عاجلانہ کارروائی بھی درکار ہے مگر وقف بورڈ کی غفلت اور کوتاہی کے سبب ہم کلکٹر دفتر پر دھرنا دینے کے لئے مجبور ہیں۔ جناب سید عزیز پاشاہ نے کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا اور تنظیم انصاف گریٹر حیدرآباد کلکٹر حیدرآباد سے اس ضمن میں مداخلت کرتے ہوئے عنبرپیٹ میں قبرستان کے لئے اراضی فراہم کرنے کی راہیں ہموار کرنے کا مطالبہ کیا۔ انھوں نے قبرستان کے لئے اراضی فراہم کرنے تک سی پی آئی اور انصاف کی جانب سے جدوجہد جاری رکھنے کا اعلان بھی کیا ہے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT