Wednesday , September 20 2017
Home / شہر کی خبریں / عوام کو گمراہ کیے بغیر فلاحی اسکیمات روبہ عمل لانے کی ہدایت

عوام کو گمراہ کیے بغیر فلاحی اسکیمات روبہ عمل لانے کی ہدایت

ووٹ بینک کی سیاست سے ہٹ کر فلاحی پروگرامس پسماندہ طبقات کی ترقی کے لیے شروع کئے گئے ہیں : چیف منسٹر
حیدرآباد ۔ 16 ۔ ستمبر : ( سیاست نیوز ) : چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے آج عہدیداروں پر زور دیا کہ وہ عوام کو گمراہ کیے بغیر فلاحی اسکیمات کو روبہ عمل لانے میں کوئی کسر باقی نہ رکھیں ۔ ووٹ بینک کی سیاست سے ہٹ کر سرکاری اسکیمات اور فلاحی پروگراموں کو موثر طریقہ سے انجام دیں تاکہ پسماندہ طبقات کو ترقی حاصل ہوسکے اور ان کو حقیقی بہبود کے ثمرات مل سکیں ۔ پرگتی بھون پر جائزہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے چیف منسٹر نے پسماندہ طبقات کی ترقی کے لیے شروع کردہ پروگرامس پر عہدیداروں سے کہا کہ ملک بھر میں تلنگانہ ریاست کی طرح کہیں بھی پروگرامس اور اسکیمات نہیں بنائے گئے ہیں ۔ صرف تلنگانہ ریاست میں ہی عوام کی بہبود خاص کر پسماندہ طبقات کی ترقی اور فوائد کے لیے فلاحی پروگراموں کو روبہ عمل لایا جارہا ہے ۔ دیگر پسماندہ طبقات کے پروگراموں کو بھی ان کی معاشی صورتحال کی اساس پر روبہ عمل لایا جارہا ہے ۔ پسماندہ طبقات کے موروثی پیشے کے اعتبار سے ترقی دی جارہی ہے اور جو لوگ اپنے موروثی پیشہ سے ہٹ کر کام کرنا چاہتے ہیں تو انہیں متبادل روزگار دیا جائے گا اس سلسلہ میں مکمل تعاون کیا جانا چاہئے ۔ چیف منسٹر نے کہا کہ ان پروگراموں کے لیے بینکوں سے کسی قسم کی رابطہ کاری کے بغیر ہر ایک کو ایک لاکھ روپئے تا 2 لاکھ روپئے کی مالی اعانت دی جانی چاہئے ۔ طبقہ واری بنیاد پر خصوصی پروگراموں کو مرتب کیا جائے ۔ انہوں نے یہ بھی اعلان کیا کہ وہ بہت جلد طبقاتی بنیاد پر عوام سے ملاقات کریں گے اور سب سے زیادہ پسماندہ طبقات وزراء کو مالی امداد دی جائے گی ۔ ان طبقات کی ترقی کے لیے 1000 کروڑ روپئے کے خصوصی پروگرام کو شروع کیا جائے گا ۔ حجام ، دھوبی ، سنار ، چرواہوں ، تاڑی تاسندوں ، ماہی گیروں کے لیے مختلف پروگرام شروع کئے گئے ہیں ۔ جنہیں موثر طور پر روبہ عمل لایا جانے کی بھی انہوں نے ہدایت دی ہے ۔ دھوبیوں کے لیے دھوبی گھاٹ اور حجاموں کے لیے عصری اصلاح خانے قائم کئے جائیں گے ۔ دیہی اور شہری ہر دونوں جگہ ان پیشہ وارانہ افراد کو سہولتیں دی جائیں گی ۔ اجلاس میں ریاستی وزراء ، جوگو رامنا ، ٹی ہریش راؤ ، اسپیکر سی پدما دیویندر ریڈی ، چیف اڈوائزر برائے حکومت راجیو شرما ، مشن بھاگیرتا وائس چیرمین وی پرشانت ریڈی اور دیگر عہدیدار شریک تھے ۔۔

TOPPOPULARRECENT