Thursday , August 17 2017
Home / شہر کی خبریں / عہدیدار مجاز اقلیتی بہبود آندھراپردیش شیخ محمد اقبال کی میعاد میں عدم توسیع

عہدیدار مجاز اقلیتی بہبود آندھراپردیش شیخ محمد اقبال کی میعاد میں عدم توسیع

اوقافی جائیدادوں کے تحفظ پر حکومت کے دعوے پر عمل ندارد، مسلمانوں میں مایوسی
حیدرآباد۔/19نومبر، ( سیاست نیوز) آندھرا پردیش کے چیف منسٹر این چندرا بابو نائیڈو اقلیتی بہبود اور اوقافی جائیدادوں کے تحفظ کے بارے میں کئی دعوے کرتے ہیں لیکن آندھرا کے مسلمانوں کو اس وقت مایوسی کا سامنا کرنا پڑا جب اوقافی جائیدادوں کے تحفظ میں اہم رول ادا کرنے والے عہدیدار مجاز وقف بورڈ شیخ محمد اقبال ( آئی پی ایس ) کی میعاد کی تکمیل کو 15 دن گذرنے کے باوجود توسیع نہیں کی گئی۔ برسراقتدار پارٹی کے علاوہ اپوزیشن جماعتوں کے مسلم قائدین نے اس سلسلہ میں چیف منسٹر سے نمائندگی کرتے ہوئے اس صورتحال پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔ آندھرا پردیش ریاست میں عہدیدار مجاز کی حیثیت سے ذمہ داری سنبھالنے کے بعد شیخ محمد اقبال نے کئی اہم قدم اٹھائے۔ ان کی میعاد 5 نومبر کو ختم ہوگئی اور سکریٹری اقلیتی بہبود ایس ایس راوت اور وزیر اقلیتی بہبود ڈاکٹر پی رگھوناتھ ریڈی نے میعاد میں توسیع کیلئے چیف منسٹر سے سفارش کرتے ہوئے فائیل روانہ کردی ہے۔ اگرچہ یہ فائیل 5 نومبر کو ہی روانہ کی گئی لیکن چندرا بابو نائیڈو نے آج تک توسیع کو منظوری نہیں دی۔ بتایا جاتا ہے کہ اوقافی جائیدادوں پر قابض کئی اہم  اور بااثر سیاسی شخصیتوں کے خلاف شیخ محمد اقبال نے فوجداری مقدمات درج کئے جس کے باعث وہ ناراض ہوکر ان کی میعاد میں توسیع کی مخالفت کررہے ہیں۔ وقف ایکٹ کی دفعہ 52(A) کے تحت شیخ محمد اقبال نے 200 سے زائد قابضین کے خلاف مقدمات درج کئے۔ اس کے علاوہ دفعہ 54 کے تحت 6000 سے زائد افراد کو نوٹس جاری کی۔ انہوں نے وقف بورڈ کی آمدنی کو نہ صرف دگنا کردیا بلکہ 56 اہم جائیدادوں کی نشاندہی کی جنہیں 30 سال کی لیز پر دیا جاسکتا ہے۔ یہ تجویز بھی حکومت کے زیر غور ہے۔ 30 سال کی لیز پر دیئے جانے سے بورڈ کو 200 کروڑ روپئے کی آمدنی کا اندازہ ہے۔ آندھرا سے تعلق رکھنے والے مسلمان اور مسلم تنظیموں نے توسیع میں تاخیر پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔ شیخ محمد اقبال آندھرا پردیش میں کمشنر اقلیتی بہبود کے عہدہ پر برقرار ہیں اور گزشتہ 15 دنوں میں ابھی تک عہدیدار مجاز کی زائد ذمہ داری کسی اور عہدیدار کو نہیں دی گئی۔ تلگودیشم کے رکن قانون ساز کونسل احمد شریف اور دیگر قائدین نے بھی اس سلسلہ میں چندرا بابو نائیڈو سے نمائندگی کرتے ہوئے شیخ محمد اقبال کی میعاد میں توسیع کی ضرورت ظاہر کی۔

TOPPOPULARRECENT