Sunday , September 24 2017
Home / شہر کی خبریں / عیدالاضحی کی آمد کے ساتھ بکرے کی قیمتوں میں اضافہ کی اطلاعات

عیدالاضحی کی آمد کے ساتھ بکرے کی قیمتوں میں اضافہ کی اطلاعات

ناتجربہ کار تاجروں سے اضافہ کا اندیشہ ۔ چمڑے کی قیمت میں بھی گراوٹ کا امکان

حیدرآباد۔22اگسٹ (سیاست نیوز) عیدالاضحی کی آمد کے قریب ہونے کے ساتھ بازار میں بکرے کی قیمتوں میں اضافہ کی اطلاعات گشت کرنے لگی ہیں اور کہا جا رہاہے کہ بڑے جانور کی قلت اور بڑے جانور کے ذبیحہ میں ہونے والی مشکلات کے سبب بکرے کی قیمت میں اضافہ ریکارڈ کیا جائے گا لیکن بعض لوگوں کا کہنا ہے کہ نا تجربہ کار تاجرین کے سبب بکرے کی قیمت میں اضافہ ہوتا ہے جبکہ عام دنو ںمیں بکرے کی قیمت اتنی زیادہ نہیں ہوتی کیونکہ بیشہ وابستہ افراد ہی اس تجارت کا حصہ ہوتے ہیں۔ ہندستان کے موجودہ حالات میں گاؤکشی اور بڑے جانور کی منتقلی کے دوران ہونے والی ہنگامہ آرائیوں کے سبب بکرے کی قیمتوں میں اضافہ کا خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے جبکہ تجارتی منڈیوں میں بکرا وافر مقدار میں موجود ہونے کی بات بھی کہی جا رہی ہے۔ بتایاجاتاہے کہ بکرے کی قیمت میں تو اضافہ ریکارڈ کیا جائیگا لیکن اس کے برعکس چرم کی قیمتوں میں تیزی سے گراوٹ کا امکان ہے۔ سال گذشتہ بھی چرم قربانی کی قیمت میں زبردست گراوٹ ریکارڈ کی گئی تھی جس کے سبب چرم قربانی وصول کرنے والے دینی مدارس کو بھی کوئی خاطر خواہ فائدہ نہیں ہوا جس کے نتیجہ میں چرم قربانی وصول کئے جانے کے باوجود بھی کافی کم رقومات وصول ہوئی۔ تاجرین چرم کے مطابق فی الحال چمڑے کے کاروبار میں بہتری دیکھی جا رہی ہے اور آج چمڑے کی قیمت 50تا60 روپئے رہی جبکہ عیدا لاضحی کے قریب چمڑے کی قیمت میں مزید گراوٹ دیکھی جائے گی۔ حیدرآباد میں اس مرتبہ بکرے کی قربانی کی کثرت دیکھی جائے گی لیکن اس کے باوجود مجموعی اعتبار سے جائزہ لینے پر یہ بات سامنے آرہی ہے کہ سابق میں جتنے لوگ قربانی دیا کرتے تھے ان میں کافی کمی ریکارڈ کی جائے گی کیونکہ عوام کا یہ ذہن بننے لگا ہے کہ بکرے کی قیمتو ںمیں گائے اور بیل کے سبب بیجا اضافہ کیا جا رہاہے اور اس بے جا اضافہ کو برداشت کرنے کے وہ متحمل نہیں ہیں اسی لئے کم قربانی پر اکتفاء کیا جائے گا۔ حیدرآباد میں تلنگانہ کے اضلاع کے علاوہ راجستھان‘ اترپردیش‘ اڑیسہ اور کرناٹک کے علاقوں سے بکرے فروخت کیلئے لائے جاتے ہیں اور ہر سال کی طرح اس سال بھی ان تمام علاقوں سے بکروں کے مندے لائے جائیں گے لیکن بیل‘ گائے اور بھینس کے علاوہ بڑے جانوروں کی منتقلی میں پیش آنے والی دشواریوں کے سبب بکرے کی قیمت میں اضافہ ریکارڈ کئے جانے کا خدشہ ہے اور عین عیدالاضحی کے بعد چرم قربانی کی قیمت میں بھاری گراوٹ ریکارڈ کئے جانے کا خدشہ ہے۔

TOPPOPULARRECENT