Thursday , August 17 2017
Home / شہر کی خبریں / غریبوں کی اراضیات کا حصول ‘ اپوزیشن کا پروپگنڈہ بے بنیاد

غریبوں کی اراضیات کا حصول ‘ اپوزیشن کا پروپگنڈہ بے بنیاد

عوام میں الجھن پیدا کرنا اصل مقصد۔ ریاستی وزیر انفارمیشن ٹکنالوجی کے ٹی راما راؤ کا بیان
حیدرآباد۔/25جولائی، ( سیاست نیوز) وزیر انفارمیشن ٹکنالوجی کے ٹی راما راؤ نے عوام سے اپیل کی کہ صنعتی اداروں کے قیام کے سلسلہ میں غریبوں کی اراضیات حاصل کرنے کے بارے میں اپوزیشن کے پروپگنڈہ پر بھروسہ نہ کریں۔ کے ٹی آر نے آج ضلع رنگاریڈی کے مختلف علاقوں میں ہریتا ہارم پروگرام میں حصہ لیا جس میں وزیر ٹرانسپورٹ مہیندر ریڈی، رکن اسمبلی ومشی ریڈی کشن ریڈی، ایم ایل سی نریندر ریڈی اور تلنگانہ انڈسٹریل انفراسٹرکچر کارپوریشن کے صدرنشین بالا ملو اور ٹی آر ایس کے قائدین شریک تھے۔ کے ٹی آر نے کہا کہ سرکاری اراضیات پر صنعتوں کے قیام کے وقت غریبوں کی اراضیات حاصل نہیں کی جائیں گی۔ اس سلسلہ میں اپوزیشن کی جانب سے جو پروپگنڈہ کیا جارہا ہے وہ بے بنیاد ہے تاکہ عوام میں الجھن پیدا کی جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ غریبوں اور کسانوں کو بے دخل کرتے ہوئے صنعتوں کے قیام کا کوئی منصوبہ نہیں اور حکومت اس طرح کا کوئی قدم نہیں اٹھائے گی۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کسانوں کو اسائنڈ اراضی کا معاوضہ بھی ادا کررہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ رئیل اسٹیٹ کے تاجر کسانوں اور عوام میں حکومت کے خلاف پرپگنڈہ کررہے ہیں۔ کے ٹی آر نے کہا کہ تلنگانہ تحریک کے دوران کہا گیا کہ تلنگانہ ریاست کے قیام کی صورت میں اراضیات کی قیمت زوال پذیر ہوگی لیکن یہ اندیشہ غلط ثابت ہوا اور اراضیات کی قیمت میں اضافہ ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ رنگاریڈی میں بین الاقوامی فارماسٹی کا قیام عمل میں آرہا ہے جس میں 99 فیصد مقامی افراد کو روزگار حاصل ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ رنگاریڈی کے عوام آبپاشی پراجکٹس نہ ہونے کے سبب بورویلز پر انحصار کیلئے مجبور ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بہت جلد کسانوں کو 24 گھنٹے برقی سربراہ کی جائے گی۔ سابقہ حکومتوں کے دور میں کسانوں کو کھاد اور بیج کیلئے بھی جدوجہد کرنی پڑی۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ پر خدا بھی مہربان ہے اور بہتر بارش ہوئی ہے۔انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر کے چندرشیکھر راؤ نے وعدہ کے مطابق کسانوں کے مکمل قرضہ جات معاف کئے ہیں۔ ملک کے کسی بھی چیف منسٹر کو کسانوں کے قرض کی معافی کا خیال نہیں آیا۔ انہوں نے کہا کہ کسانوں کو فی ایکر 4 ہزار روپئے فراہم کئے جارہے ہیں۔ انہوں نے تیقن دیا کہ رنگاریڈی ضلع میں تمام اراضیات کو سیراب کرتے ہوئے سرسبز و شاداب بنانے کیلئے حکومت اقدامات کرے گی۔ کانگریس قائدین پر تنقید کرتے ہوئے کے ٹی آر نے کہا کہ وہ پراجکٹس کی تعمیر میں رکاوٹ پیدا کرنا چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ایک طرف پانی کی سربراہی کا مطالبہ کیا جارہا ہے جبکہ دوسری طرف مقدمات دائر کرکے رکاوٹ پیدا کی جارہی ہے۔ انہوں نے عوام کو مشورہ دیا کہ وہ ہریتا ہارم پروگرام میں حصہ لے کر شجرکاری کریں اور اسے ہر شخص اپنی ذمہ داری کے طور پر نبھائے۔

TOPPOPULARRECENT