Saturday , August 19 2017
Home / اضلاع کی خبریں / غریبی تعلیم میں رکاوٹ نہیں بن سکتی

غریبی تعلیم میں رکاوٹ نہیں بن سکتی

عادل آباد میں طلبہ سے ہائی کورٹ جج بی چندر کمار کا خطاب
عادل آباد /10 ستمبر ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) تعلیم ہی وہ زیور ہے جس سے انسان ترقی کی سمت گامزن ہوسکتا ہے ۔ ان خیالات کا اظہار ریاست تلنگانہ ہائی کورٹ جج مسٹر بی چندر کمار نے عادل آباد کے شمع اردو اسکول کے طلباء و طالبات سے مخاطب ہوکر کیا اور ان کی ہمت افزائی کے طور پر اپنی آپ بیتی بیان کرتے ہوئے کہا کہ غریبی تعلیم میں رکاوٹ نہیں بن سکتی ۔ اس موقع پر فاضل جج نے ’’ روزنامہ سیاست میں شائع شدہ خبر ‘‘ کا حوالہ دیتے ہوئے حیدرآباد کے مسٹر جمیل حسین جو فرنیچر پالیش کا کام کیا کرتے ہیں جن کی ہونہار بیٹی عائشہ جبین ایمسٹ میں 4457 رینک حاصل کرتے ہوئے ایم بی بی ایس میں فری سیٹ حاصل کیا ۔ مسٹر بی چندر کمار نے نبی کریم ﷺ کی سیرت پر بھی روشنی ڈالی ۔ فاضل جج نے طلباء اور طالبات کو بغیر کسی رکاوٹ تعلیمی میدان میں بڑھ چڑھ کر حصہ لینے کا مشورہ دیا ۔ مستقر کے پی آر ٹی یو بھون میں منعقدہ اس تقریب میں خانگی مدارس انتظامیہ کمیٹی کے ذمہ داروں میں مسرز ادھیناتھ ، آر پون کمار ، دیویندر ٹاپاسکر ، عبدالاحد ، شفیق احمد ، بانی و کرسپانڈنٹ شمع اردو اسکول مسٹر محمد اخلاق نے بھی مخاطب کیا جبکہ اولیائے طلباء اساتذہ کی کثیر تعداد موجود تھی ۔ اس موقع پر ہائی کورٹ جج مسٹر بی چندر کمار کی بکثرت گلپوشی اور شال پوشی کی گئی جلسہ کی کارروائی مدرسہ ہذا کے مستقر منصور احمد نے چلائی ۔ مسٹر محمد آصف صدر مدرس شمع اردو اسکول نے افتتاحی کلمات پیش کئے جبکہ طلباء و طالبات نے اپنا بہترین تعلیمی مظاہرہ پیش کیا ۔ یہاںاس بات کا تذکرہ بے جا نہ ہوگا کہ فاضل جج مسٹر بی چندر کمار کا تعلق مستقر عادل آباد سے ہے موصوف غریبی کے پہاڑ کو نظر انداز کرتے ہوئے تعلیمی حاصل کرنے کے بعد پیشہ وکالت سے وابستہ ہوکر معاشی حالت سے دوچار کسم پُرسی کی زندگی گذارنے والے افراد خاندان کے مسائل کو عدالت میں حل کیا کرتے تھے ۔ موصوف کی نمایاں خدمات کا لحاظ رکھتے ہوئے حکومت نے انہیں جلیل القدر عہدے پر فائز کیا ۔ فاضل جج اکثر و بیشتر ضلع کے مختلف مدارس پہنچکر طلباء اور طالبات کی ہمت افزائی کرتے ہیں یہ پہلا موقع ہے کہ ہائی کورٹ جج مسٹر بی چندر کمار نے اردو مدسہ میں شمع اردو ہائی اسکول کے طلباء اور طالبات سے جہاں ایک طرف مخاطب ہوئے وہیں دوسری طرف طلباء اور طالبات سے فرداً فرداً ملاقات بھی کی ۔

TOPPOPULARRECENT