Wednesday , July 26 2017
Home / شہر کی خبریں / غریب اقلیتوں کو قرض اور ضامن روزگار تربیت پر خصوصی توجہ

غریب اقلیتوں کو قرض اور ضامن روزگار تربیت پر خصوصی توجہ

صدر نشین اقلیتی مالیاتی کارپوریشن کا عزم ، ماضی کی اسکیمات پر عمل کی رپورٹ طلبی
حیدرآباد ۔ 15۔ مارچ (سیاست نیوز) تلنگانہ اقلیتی فینانس کارپوریشن کے صدرنشین سید اکبر حسین نے کارپوریشن کے عہدیداروں کو ہدایت دی کہ وہ حکومت کی اسکیمات پر عمل آوری سے متعلق گزشتہ تین برسوں کی رپورٹ پیش کریں۔ انہوں نے کہا کہ کارکردگی کا جائزہ لینے کے بعد ہی وہ آئندہ کے ایکشن پلان کو قطعیت دیں گے ۔ سید اکبر حسین نے کارپوریشن کے عہدیداروں سے کہا کہ غریب اقلیتوں کو بینک سے مربوط قرض کی فراہمی اور ٹریننگ ایمپلائمنٹ جیسی اہم اسکیمات پر خصوصی توجہ مرکوز کریں۔ گزشتہ برسوں میں یہ اسکیمات کسی نہ کسی وجہ سے سست رفتاری کا شکار ہوگئی تھی۔ صدرنشین نے کہا کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ اقلیتوں کی تعلیمی اور معاشی ترقی کے بارے میں سنجیدہ ہیں اور اقلیتی فینانس کارپوریشن اس سلسلہ میں اہم رول ادا کرسکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بہت جلد کارپوریشن کے تمام اگزیکیٹیو ڈائرکٹرس کا اجلاس طلب کیا جائے گا ، جس میں مختلف اسکیمات پر عمل آوری کا جائزہ لینے کے علاوہ انہیں آئندہ ایک سال کیلئے ٹارگٹ الاٹ کئے جائیں گے ۔ سید اکبر حسین نے کہا کہ ان کی ترجیح اس بات پر ہوگی کہ تمام اسکیمات پر شفافیت کے ساتھ عمل آوری کی جائے اور اسکیمات کے فوائد حقیقی مستحقین تک پہنچے۔ انہوں نے کہا کہ کسی بھی سطح پر بے قاعدگی یا بدعنوانی کو ہرگز برداشت نہیں کیا جائے گا۔ صدرنشین نے کہا کہ حکومت نے اقلیتوں کو چھوٹے کاروبارکے آغاز کے لئے سبسیڈی کی فراہمی اسکیم کے تحت رقم کو بڑھاکر 10 لاکھ کردیا ہے۔ وہ اس بات کی کوشش کر رہے ہیں کہ اس اسکیم کے تحت بینکوں سے قرض کی اجرائی میں سہولت ہو۔ ضرورت پڑنے پر اس اسکیم کے سلسلہ میں وزیر فینانس ای راجندر کی صدارت میں بینکرس کا اجلاس طلب کیا جائے گا ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت بینکوں کی مداخلت کے بغیر غریب اقلیتوں کو راست چھوٹے قرض جاری کرنے کا منصوبہ رکھتی ہے۔ سید اکبر حسین نے جو وزیر فینانس ای راجندر کے قریبی مانے جاتے ہیں، امید ظاہر کی کہ اقلیتی فینانس کارپوریشن کو بجٹ کی اجرائی کے سلسلہ میں محکمہ فینانس کا رویہ فراخدلانہ رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ اسکیمات پر موثر عمل آوری اور بہتر کارکردگی کے ذریعہ زائد بجٹ حاصل کیا جاسکتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ وہ مختلف اضلاع کا دورہ کرتے ہوئے ضلع کلکٹرس اور بینکرس کے ساتھ اجلاس منعقد کریں گے تاکہ سبسیڈی سے متعلق اسکیم پر موثر عمل آوری ہو۔ انہوں نے کہا کہ زیر التواء درخواستوں کی عاجلانہ یکسوئی کیلئے اقدامات کئے جائیں گے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT