Thursday , August 24 2017
Home / Top Stories / غریب تنہا خواتین کیلئے ماہانہ ہزار روپئے وظیفہ

غریب تنہا خواتین کیلئے ماہانہ ہزار روپئے وظیفہ

سماج کے ہر فرد سے انصاف کے اقدامات ‘چیف منسٹر کا بیان
حیدرآباد۔6 جنوری (سیاست نیوز) حکومت نے ریاست میں تنہا زندگی بسر کرنے والی غریب بے یار و مددگار خواتین کے لیے ماہانہ ایک ہزار روپئے وظیفے کی اسکیم کا اعلان کیا ہے۔ چیف منسٹر کے چندر شیکھر رائو نے آج اسمبلی میں اس اسکیم کا اعلان کیا جس پر آئندہ مالیاتی سال یعنی جون سے عمل کیا جائے گا۔ چیف منسٹر نے کہا کہ انسانی بنیادوں پر یہ اسکیم شروع کی جارہی ہے جس کا پارٹی کے انتخابی منشور میں وعدہ نہیں کیا گیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ تنہا زندگی گزارنے والی غریب خواتین کے مسائل کو پیش نظر رکھتے ہوئے حکومت نے ان کی ضروری مالی امداد کا فیصلہ کیا ہے تاکہ وہ دوسروں کے آگے مدد کے لیے ہاتھ پھیلانے سے بچ جائیں۔ انہوں نے کہا کہ ریاست کی معاشی صورتحال کا جائزہ لینے کے بعد اس اسکیم کا آغاز کیا جارہا ہے اور ابتدائی اندازے کے مطابق دو تا تین لاکھ بے سہارا خواتین ریاست میں ہیں جو تنہا زندگی بسر کررہی ہیں۔ ایسی خواتین کو ہر ماہ ایک ہزار روپئے کی امداد دی جائیگی۔ مارچ 2017ء میں بجٹ میں اسکیم کے لیے رقومات مختص کی جائیں گی۔ تمام ضلع کلکٹرس کو اسکیم پر عمل آوری کی تیاری اور مستحق خواتین کے نام درج کرنے کی ہدایت دی گئی ہے۔ چیف منسٹر نے ایسی تنہا خواتین سے اپیل کی کہ وہ اپنے نام حکومت کے پاس درج کرائیں۔ انہوں نے ارکان مقننہ سے بھی اپیل کی کہ وہ ایسی خواتین کی بھلائی کی فکر کریں اور ان کے نام شامل کرانے کی ذمہ داری قبول کریں۔ چیف منسٹر نے اپنے بیان میں کہا کہ حکومت نے انتخابی منشور کے علاوہ بھی کئی اسکیمات کا انسانی بنیادوں پر آغاز کیا ہے۔ غریب خاندانوں میں لڑکیوں کی شادی کے موقع پر مالی مشکلات کم کرنے کے لئے کلیان لکشمی اور شادی مبارک جیسی اسکیمات شروع کی گئی جو ملک بھر میں اپنی نوعیت کی منفرد اسکیمات ہیں۔ ان اسکیمات کے تحت ہزاروں خاندانوں کو فی کس 51 ہزار روپئے کی امداد دی جاچکی ہے۔ چیف منسٹر نے کہا کہ حکومت سماج کے ہر فرد کو یکساں انصاف فراہم کرنے اور ان کی عزت نفس کے تحفظ کے اقدامات کررہی ہے تاکہ وہ معاشی طور پر مستحکم ہوں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت موافق غریب ہے۔ چیف منسٹر نے بتایا کہ اکثر سیاسی جماعتیں اپنے انتخابی منشور پر عمل آوری تک محدود رہتی ہیں لیکن حکومت نے غریبوں کے مسائل کو پیش نظر رکھتے ہوئے کئی ایسی اسکیمات کا آغاز کیا جن کا انتخابی منشور میں کوئی تذکرہ نہیں ہے۔ غریب افراد بیوائوں اور معذورین کے لئے آسرا پنشن اسکیم کا آغاز کیا گیا۔ بعض علاقوں میں خواتین بیڑی تیاری کے ذریعہ اپنے خاندانوں کی مدد کررہی ہیں۔ سخت محنت کے باوجود وہ اپنی ضروریات کے لئے مناسب آمدنی حاصل کرنے سے قاصر ہیں۔ حکومت نے بیڑی ورکرس کے لیے ہر ماہ 1000 روپئے کی امداد کا اعلان کیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT