Thursday , October 19 2017
Home / Top Stories / غیر دیانتدار افراد کے لیے 30 دسمبر کے بعد تباہی

غیر دیانتدار افراد کے لیے 30 دسمبر کے بعد تباہی

ملک کے مفاد میں مزید سخت فیصلے ، نئے ٹیکسس عائد کرنے کا اشارہ : نریندر مودی
ممبئی ۔ 24 ۔ دسمبر : ( سیاست ڈاٹ کام) : وزیراعظم نریندر مودی نے خبردار کیا کہ 30 دسمبر کے بعد ’ غیر دیانتدار ‘ افراد کے لیے مزید ’ تباہی ‘ ہوگی ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت ملک کے مفاد میں سخت فیصلوں سے گریز نہیں کرے گی اور سرمایہ مارکٹس میں مزید ٹیکسیس کی تائید کی ۔ عوامی جلسوں سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے غیر دیانتدار افراد سے کہا کہ وہ کرپشن کے خلاف ملک کے موڈ کو غیر اہم نہ سمجھیں ۔ غیر دیانتدار افراد کو 125 کروڑ عوام کے موڈ کے بارے میں غلط اندازہ قائم نہیں کرنا چاہیے ۔ آپ کو ان سے ڈرنا چاہئے ۔ وقت آگیا ہے کہ غیر دیانتدار افراد کا صفایا کردیا جائے ۔ یہ ایک صفائی مہم ہے ۔ وزیراعظم نے یہ بات اس وقت کہی جب کہ منسوخ شدہ 500/1000 روپئے کی کرنسی بینکوں میں جمع کرانے کی مدت 30 دسمبر کو ختم ہورہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ 50 دن کے بعد دیانتدار افراد کی مشکلات کم اور غیر دیانتدار افراد کی مشکلات بڑھنی شروع ہوگی ۔ انہوں نے ایک اور پروگرام میں مزید جامع اور ٹھوس معاشی پالیسیوں کی تائید کی جو مختصر مدتی سیاسی فائدے کے لیے نہیں بلکہ وسیع تر قومی مفاد میں ہوں گی ۔ مودی نے کہا کہ وہ واضح طور پر یہ کہنا چاہتے ہیں کہ حکومت ٹھوس اور جامع معاشی پالیسیوں کو جاری رکھے گی تاکہ مستقبل روشن ہوسکے ۔ ہم محض اپنی کارکردگی دکھانے کے لیے مختصر مدتی پالیسیاں اختیار نہیں کریں گے ۔ انہوں نے مارکیٹ کے مختلف فریقین سے صاف ، شفاف اور موثر انداز میں ٹیکس حصہ داری میں اضافہ کی تائید کی ۔ وزیراعظم کے یہ ریمارکس یکم فروری کو پیش کیے جانے والے بجٹ کے تناظر میں اہمیت رکھتے ہیں ۔ نوٹ بندی کی مخالفت کرنے والی جماعتوں پر تنقید کرتے ہوئے انہوں نے کہا ’ یہ کوئی آسان لڑائی نہیں ‘ وہ تو ساری ملائی کھا گئے اور نوٹ بندی کو ناکام بنانے کوئی کسر نہیں چھوڑی ۔ بدعنوان لوگوں نے نوٹ بندی کے فیصلہ کو ناکام بنانے کی تمام تر کوششیں کرلی ۔ یہاں تک انہوں نے بینک عہدیداروں سے مل کر کالا دھن کو سفید بنانے کا سوچا اور ایسی کوشش میں کتنے ہی پکڑے گئے ۔ انہوں نے کہا کہ نوٹ بندی کا فیصلہ انتہائی مشکل تھا لیکن مختصر مدتی تکالیف سے طویل مدتی فوائد ہوں گے ۔۔

TOPPOPULARRECENT