Tuesday , August 22 2017
Home / شہر کی خبریں / غیر قانونی مسالخ کے خلاف بلدیہ کی مہم میں شدت

غیر قانونی مسالخ کے خلاف بلدیہ کی مہم میں شدت

ذبح گوشت کے ثبوت و شواہد کا حصول ، گوشت کی دکانات پر بھی نظریں مرکوز
حیدرآباد۔18مئی (سیاست نیوز) شہر میں مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کی جانب سے غیر قانی مسالخ میں ذبح کئے گئے گوشت کی فروخت اور اس کے استعمال کے خلاف جاری مہم میں آئندہ دو یوم کے بعد مزید شدت پیدا ہوگی اور دونوں شہروں میں موجود دکانات پر فروحت کئے جانے والے گوشت کی جی ایچ ایم سی کے مسالخ میں ذبح کئے گئے ثبوت و شواہد حاصل کئے جائیں گے۔ بتایا جاتا ہے کہ ہوٹلوں میں اسٹامپ کے بغیر گوشت استعمال کئے جانے کے خلاف مہم کے دوران جو انکشافات ہوئے ہیں انہیں دیکھتے ہوئے جی ایچ ایم سی عہدیداروں نے فیصلہ کیا ہے کہ دونوں شہرو ںمیں موجود گوشت کی دکانات میں فروخت کئے جانے والے گوشت کا جائزہ لیا جائے ۔ باوثوق ذرائع سے موصولہ اطلاعات کے مطابق مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کی جانب سے پرانے شہر کے علاوہ شہر کے نواحی علاقو ں میں جاری غیر قانونی مسالخ اور کولڈ اسٹوریج کے متعلق معلومات اکٹھا کی جا رہی ہیں تاکہ اس بات کا پتہ چلایا جاسکے کہ شہر میں کتنے غیر قانونی مسالخ چلائے جا رہے ہیں ۔عہدیداروں نے بتایا کہ ان مسالخ کی نشاندہی کے فوری بعد انہیں مہر بند کرنے کا سلسلہ شروع کیا جائے گا کیونکہ غیر قانونی مسالخ نہ صرف شہری انتظامیہ کی آمدنی کو متاثر کرنے کے مترادف ہے بلکہ ان مسالخ کے ذریعہ عوام کو کس طرح کا گوشت سربراہ کیا جا رہا ہے یہ کہنا نا ممکن ہے اسی لئے ان مسالخ کے علاوہ بغیر اسٹامپ والا گوشت فروخت کرنے والی دکانات کو بھی بھاری جرمانے عائد کرنے کا منصوبہ تیار کیا جا رہاہے کیونکہ اس بات کی شکایات موصول ہوئی ہیں کہ شہر میں کئی گو شت کی دکانوں پر فروخت کیا جانا والا گوشت خانگی طور پر ذبح کردہ ہوتا ہے اور اس پر سرکاری مہر نہیں ہوتی۔جی ایچ ایم سی کی جانب سے چنگی چرلہ ‘ رنمست پورہ ‘ کاچی گوڑہ کے علاوہ دیگر مسالخ سے شہر میں داخل ہونے والی سڑکوں پر رکاوٹیں کھڑی کرتے ہوئے خریدے گئے گوشت اور اس پر اسٹامپس کا جائزہ لینے کے علاوہ رسائد کی جانچ کی منصوبہ بندی کی جا رہی ہے اور اس سلسلہ میں محکمہ پولیس سے بھی تعاون حاصل کرنے پر غور کیا جا رہا ہے کیونکہ راستوں پر روک کر گوشت کی تحقیق اور رسائد کی جانچ کی صور ت میں پیدا ہونے والے مسائل سے نمٹا جا سکے۔ دونوں شہرو ںمیں گوشت کی دکانات پر فروخت کئے جانے والے گوشت کے خانگی ذبیحہ کے متعلق تاجرین گوشت کا کہنا ہے کہ بعض تاجر کچھ جانور خانگی طور پر ذبح کرتے ہیں لیکن یہ روز کا معمو ل نہیں ہے اور مسالخ شہر سے دور ہونے کے سبب وہ ایسا کرنے پر مجبور ہیں ۔اس کے علاوہ مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کے عہدیداروں کی جانب سے جگہ جگہ گوشت کی منتقلی کا جائزہ لیا جائے گااور شہر کے شادی خانوں میں استعمال کئے جانے والے گوشت پر بھی کڑی نگاہ رکھنے کی ہدایت جاری کی گئی ہے۔بتایاجاتا ہے کہ غیر قانونی ذبیحہ کے متعلق جی ایچ ایم سی کی جانب سے عوام میں شبہات پیدا کرنے کی بھی خصوصی مہم چلائی جائے گی۔

TOPPOPULARRECENT