Thursday , September 21 2017
Home / شہر کی خبریں / غیر مجاز اور بلا اجازت تعمیرات کی نشاندہی مکمل

غیر مجاز اور بلا اجازت تعمیرات کی نشاندہی مکمل

آئندہ ماہ جی ایچ ایم سی سے نوٹس کی اجرائی ، پرانا شہر پر خصوصی نظر
حیدرآباد۔13ستمبر(سیاست نیوز) شہر حیدرآباد میں غیر مجاز تعمیرات اور بلا اجازت کی گئی تعمیرات کی نشاندہی کا عمل مکمل کرلیا گیا ہے ۔ مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کے ذرائع کے مطابق آئندہ ماہ سے ان جائیدادوں کے مالکین کو جی ایچ ایم سی کی جانب سے نوٹس جاری کی جائے گی ۔ دونوں شہروں حیدرآباد و سکندرآباد کے علاوہ مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کے حدود میں موجود غیر مجاز تعمیرات کو باقاعدہ بنانے کے لئے کئے جانے کے سلسلہ میں بتایاجاتاہے کہ اب تک جن عمارتوں کے غیر قانونی تعمیر اور غیرمجاز تعمیر کا ریکارڈ اکٹھا کیا گیا ہے انہیں موقع فراہم کرنے سے متعلق منصوبہ بندی کی جائے گی تاکہ جائیداد ٹیکس کی وصولی میں اضافہ کو یقینی بنایا جاسکے ۔ شہر حیدرآباد بالخصوص پرانے شہر کی جن جائیدادوں سے ٹیکس وصول نہیں ہو رہاہے انہیں بھی بلدیہ نے غیر مجاز اور غیر قانونی عمارتوں کی فہرست میں شامل کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔بلا اجازت تعمیر کردہ عمارتوں کی علحدہ فہرست کی تیاری کی ہدایت دی گئی ہے تاکہ ان عمارتوں کو بعد از تعمیر فیس اور جرمانہ عائد کرتے ہوئے انہیں باقاعدہ بنایا جاسکے۔ بلدی قوانین کے مطابق 100 گز سے کم قطعہ اراضی پر تعمیر کیلئے اجازت کی ضرورت نہیں ہے لیکن عمارت کی اونچائی کیلئے حد مقرر ہے اور اس حد سے تجاوز کرنے والی عمارتوں کے مالکین کو بھی نوٹس کی اجرائی عمل میں لائی جائے گی۔ شہر کے رہائشی علاقوں کو محفوظ بنانے کے علاوہ ان علاقوں میں موجود مکانات کی جیو ٹیگنگ کو ممکن بنایا جاسکے۔ جی ایچ ایم سی عہدیداروں کا کہنا ہے کہ تمام بلا اجازت تعمیری مکانات کو نوٹس کی اجرائی کے بعد ہی اس بات کو ممکن بنایا جاسکتا ہے کہ جتنی عمارتیں موجود ہیں ان کی جیو ٹیگنگ ہو۔ جو عمارتیں غیر قانونی و غیر مجاز ہیں ان کے مالکین سے مذاکرات اور بالکلیہ طور پر غیر قانونی عمارتوں کے انہدام کے متعلق بھی غور کیا جا رہاہے تاکہ شہر میں غیر مجاز و غیر قانونی عمارتیں نہ رہیں کیونکہ اکثر غیر قانونی عمارتیں ناجائز قبضہ کردہ اراضیات پر تعمیر کی گئی ہیں۔

TOPPOPULARRECENT