Wednesday , October 18 2017
Home / شہر کی خبریں / غیر منظم ورکرس کیلئے بورڈ کا عنقریب قیام

غیر منظم ورکرس کیلئے بورڈ کا عنقریب قیام

چیف منسٹر کی پالیسیاں موافق مزدور ‘ این نرسمہا ریڈی کا خطاب
حیدرآباد ۔ یکم مئی ( سیاست ڈاٹ کام ) حکومت کی جانب سے جلدی ہی غیر منظم شعبہ کے ورکرس کیلئے ایک بورڈ کا قیام عمل میں لایا جائیگا ۔ ریاستی وزیر داخلہ و لیبر این نرسمہا ریڈی نے یہ بات بتائی ۔ انہوں نے لیبر ڈے تقاریب اور شرم شکتی ایوارڈز دینے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ نئی صنعتی پالیسی کے ذریعہ اچھی تنخواہوں پر مشتمل دو تا تین لاکھ ملازمتوں کے مواقع دستیاب ہونگے ۔ یہ ملازمتیں ریاستی حکومت کی جانب سے معلنہ ایک لاکھ ملازمتوں کے علاوہ ہونگی ۔ مسٹر نرسمہا ریڈی نے مزدوروں اور ورکرس سے کہا کہ وہ صنعتوں کی ترقی کیلئے کام کریں۔ اسی طرح انتظامیہ کو بھی چاہئے کہ وہ مزدوروں کی فلاح و بہبود پر توجہ دے ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کی جانب سے صنعت و انتظامیہ کی ضروریات کا خیال بھی رکھا جائیگا ۔ انہوں نے بتایا کہ فلاح و بہبود کی اسکیمات پر عمل آوری کا جہاں تک سوال ہے اس میں ابھی تک تلنگانہ سارے ملک میں اول نمبر پر ہے ۔ وزیر موصوف نے کہا کہ حکومت کی جانب سے سنگارنی کالریز کے ورکرس ‘ سرکاری ملازمتیں اور آر ٹی سی ملازمین و کئی دوسروں کو فٹمنٹ الاؤنس فراہم کیا گیا ہے ۔ چیف منسٹر کے سی آر کی پالیسیاں مزدوروں اور ورکرس کیلئے سازگار ہیں۔ حکومت نے آنگن واڑی ورکرس کو اضافی تنخواہوں کے ساتھ ٹیچر بنادیا گیا ہے ۔ اس کے علاوہ حکومت کی جانب سے اقل ترین اجرت بورڈ بھی دس برس کے بعد قائم کیا گیا ہے ۔ انہوں نے چیف منسٹر کی ستائش کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے حیدرآباد کے گنگا جمنی کلچر کو بحال کیا ہے اور انہوں نے تمام برادریوں بشمول مسلمانوں ‘ عیسائیوں اور ہندوں کی ترقی کو یقینی بنانے اقدامات کئے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT